جنوبی لبنان کو صیہونی حکومت کے قبضے سے آزاد کرانے میں صرف ایران نے مدد کی تھی، سید حسن نصراللہ

بیروت: حزب اللہ لبنان کے سربراہ سید حسن نصراللہ نے کہا ہے کہ جنوبی لبنان کو صیہونی حکومت کے قبضے سے آزاد کرانے میں صرف اسلامی جمہوریہ ایران نے مدد کی تھی۔ حزب اللہ کے سیکرٹری جنرل نے جنوبی لبنان کی آزادی کی سالگرہ پر ایک تقریب سے خطاب میں کہا کہ جب جنوبی لبنان پر غاصب صیہونی حکومت نے قبضہ کر لیا تو اسلامی ملکوں کی تنظیم او آئی سی، عرب لیگ، امریکہ اور اقوام متحدہ میں سے کسی نے بھی لبنان کی کوئی مدد نہیں کی۔ انہوں نے کہا کہ جنوبی لبنان کو صیہونی حکومت کے قبضے سے آزاد کرانے میں صرف اسلامی جمہوریہ ایران نے مدد کی تھی۔ سید حسن نصراللہ نے حزب اللہ اور فوج کے اتحاد کو سن دو ہزار میں غاصب صیہونی حکومت کے فوجیوں کو مقبوضہ علاقوں سے پیچھے دھکیلنے میں کامیابی کا راز قرار دیا۔

انہوں نے کہا کہ قبضے کے دوران پورے پندرہ سال مغربی ممالک غاصب صیہونی حکومت کے ساتھ اور اس کے قبضے کی حمایت کرتے رہے۔ سید حسن نصراللہ نے ریاض میں امریکہ اور بعض مسلم ممالک کے سربراہوں کے اجلاس کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ اس اجلاس میں لبنان کے بارے میں جو کچھ کہا گیا، اس سے لبنان کی صورتحال میں کوئی فرق آنے والا نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم نے لبنان میں سیاسی اختلافات کو دور کرنے پر اتفاق کیا ہے، لیکن اقتصادی اور سلامتی سے متعلق امور میں ہم اپنے موقف پر بدستور باقی ہیں۔

یہ بھی پڑھیں

باربی کیو پارٹی سے جنگل میں آگ، طالب علموں پر ڈھائی کروڑ یورو جرمانہ

باربی کیو پارٹی سے جنگل میں آگ، طالب علموں پر ڈھائی کروڑ یورو جرمانہ

اٹلی کے جنگلات میں بڑے پیمانے پر آتشزدگی کا باعث بننے والے دو طالبعلموں پر …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے