میلانیا نے روم میں بھی ٹرمپ کا ہاتھ جھٹک دیا

روم: امریکی خاتون اول میلانیا نے اسرائیل کے بعد روم میں بھی ٹرمپ کا ہاتھ تھامنے سے انکار کردیا۔ آج کل امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ اور ان کی اہلیہ میلانیا ٹرمپ کے درمیان ناراضگی کا چرچا عام ہے اور میڈیا ہر جگہ دونوں پر خاص نظر رکھے ہوئے ہے۔ امریکی صدارتی جوڑے نے میڈیا کو روم میں بھی مایوس نہیں کیا کیونکہ وہاں بھی صدر ٹرمپ کی اپنی اہلیہ کا ہاتھ تھامنے کی ایک اور کوشش ناکام ہوگئی۔
ایسا لگتا ہے کہ پاکستانیوں کی طرح امریکا میں بھی شوہر اپنی بیویوں سے ڈرتے ہیں کیونکہ ڈونلڈ ٹرمپ اپنی اہلیہ کو رام نہیں کرسکے۔ امریکی صدر اٹلی کے دارالحکومت روم پہنچے تو طیارے سے اترتے ہوئے ان کے دل میں ایک مرتبہ پھر یہ تمنا جاگی کہ اپنی خوبصورت اہلیہ کے ہاتھوں میں ہاتھ تھام کر ایک دوسرے کے قدم سے قدم ملاتے ہوئے بین الاقوامی میڈیا میں اچھا تاثر چھوڑیں لیکن ان کی تمنا اس وقت سبکی میں بدل گئی جب میلانیا نے ایک مرتبہ پھر ان کا ہاتھ نہیں تھاما اور بے چارے ٹرمپ دل مسوس کر رہ گئے۔
واضح رہے کہ دونوں کے درمیان چپقلش کا پہلا ثبوت اس وقت ملا تھا جب اسرائیل پہنچنے پر میلانیا نے صدر ٹرمپ کا ہاتھ جھٹک دیا تھا اور سارے دورے میں وہ اکھڑی اکھڑی ہی نظر آئیں تھیں۔

یہ بھی پڑھیں

لندن کے گریٹ آرمنڈ اسپتال میں کامیاب آپریشن

لندن کے گریٹ آرمنڈ اسپتال میں کامیاب آپریشن

لندن: اس آپریشن کی سیریز میں مجموعی طور پر 55 گھنٹے کا دورانیہ صرف ہوا …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے