سعوی عرب امریکہ کے ساتھ بڑے پیمانے پر خفیہ معلومات کا تبادلہ کرتا ہے، عادل الجبیر

ریاض: سعودی وزیر خارجہ نے کہا ہے کہ سعوی عرب امریکہ کے ساتھ بڑے پیمانے پر خفیہ معلومات کا تبادلہ کرتا ہے، امریکہ کے ساتھ انٹیلی جنس معلومات کے تبادلے کے حوالے سے فکرمند نہیں۔ امریکی صدر ڈونلد ٹرمپ کے دورے سے پہلے سعودی وزیر خارجہ عادل الجبیر کا کہنا تھا کہ سعودی عرب کے صرف سابق صدر اوباما کی انتظامیہ کے دور میں امریکا کے ساتھ اختلافات پیدا ہوئے تھے، ڈونلڈ ٹرمپ ان تعلقات کو ایک نئی جہت دینے کی کوشش کر رہے ہیں۔ ہم اپنے اتحادی ممالک اور خاص طور پر امریکا کے ساتھ مل کر کام کریں گے اور یہ چاہیں گے کہ ایران ایک عام ملک کی طرح کردار ادا کرے۔ واضح رہے کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے سعودی عرب کے دورہ کے موقع پر عرب، امریکی، اسلامی سربراہ اجلاس ہوگا اور اس میں سینتیس ممالک کے سربراہان شرکت کریں گے۔اس اجلاس میں دہشت گردی کے خلاف جنگ ،تجارت ،سرمایہ کاری ،نوجوانوں اور ٹیکنالوجی سے متعلق امور پر تبادلہ خیال کیا جائے گا۔

یہ بھی پڑھیں

'اگر ہم خطے میں حقیقی سلامتی چاہتے ہیں تو پھر اس کا حل امریکی جارحیت کو روکنا ہے

‘اگر ہم خطے میں حقیقی سلامتی چاہتے ہیں تو پھر اس کا حل امریکی جارحیت کو روکنا ہے

ایران : صدر حسن روحانی نے واشنگٹن کے الزامات کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے