گرمیوں میں سردیوں کے لیے سستی ایل این جی دستیاب تھی

گرمیوں میں سردیوں کے لیے سستی ایل این جی دستیاب تھی

اسلام آباد: بالآخر وزیر اعظم کے معاون خصوصی برائے پیٹرولیم ندیم بابر نے مان لیا کہ گرمیوں میں سردیوں کے لیے سستی ایل این جی دستیاب تھی

اور اکتوبر کے مہینے میں بھی دسمبر کے لیے ایل این جی خریدی جاتی تو وہ ساڑھے 5 ڈالر پر مل رہی تھی

گرمیوں میں سستی ایل این جی دستیاب ہونے اور سردیوں میں ڈیمانڈ کا پتا ہونے کے باجود دیر کرکے نومبر کے مہینے میں دسمبر کے لیے سوا 7 ڈالر کی مہنگی ایل این جی خرید کر کیوں اربوں روپے کا نقصان کیا گیا؟

یہ بھی پڑھیں

سائنس نے ایک بار پھر انسانیت کے لیے کام کر دکھایا

سائنس نے ایک بار پھر انسانیت کے لیے کام کر دکھایا

اسلام آباد: وفاقی وزیر برائے سائنس و ٹیکنالوجی فواد چوہدری نے سماجی رابطے کی ویب …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے