ہم جلسہ گاہ جائیں گے اور جہاں جو رکاوٹ ہوگی اس سے وہیں نمٹیں گے

ہم جلسہ گاہ جائیں گے اور جہاں جو رکاوٹ ہوگی اس سے وہیں نمٹیں گے

ملتان: پی ڈی ایم کے جلسے سے قبل میڈیا سے گفتگو میں انہوں نے کہا کہ ہم ہر قیمت پر جلسہ کریں گے اور اس وقت تک ملتان سے نہیں نکلیں گے جب تک جلسہ کرکے نہیں دکھاتے

جو بھی حالات ہوں گے، ہم ہر طرح کی قربانی دینے کے لیے تیار ہیں، ہماری طرف سے کسی قسم کی کوئی رعایت نہیں ہوگی، ہم ملتان میں مکمل طور پر ڈیرہ جمائیں گے اور یہاں بھی ہم ہوں گے اور پورے پاکستان میں بھی لوگ سڑکوں پر آجائیں گے۔
ایک صحافی نے سوال کیا کہ عدالت نے کہا ہے کہ ساری رکاوٹیں ہٹائی جائیں اور علی قاسم گیلانی کو رہا کیا جائے، جس پر مولانا نے جواب دیا کہ میرے خیال سے عدالت نے فیصلہ حالات اور زمینی حقائق کو سامنے رکھ کر دیا ہے، انہوں نے قانون کے مطابق یہ جائز سمجھا ہے کہ جلسہ ہو کیونکہ یہ جمہوری روایات اور قدر کے عین مطابق ہے۔
مولانا نے کہا کہ عدالت نے بھی یہ فیصلہ دیا ہے کہ جلسہ ہو اور ہم نے بھی یہی فیصلہ کیا ہے، لہٰذا ہم اور عدالت ایک پیج پر ہیں۔
جلسے کے مقام سے متعلق سوال کے جواب میں مولانا فضل الرحمٰن کا کہنا تھا کہ ہم صورتحال کو دیکھیں گے کہ جلسہ کہاں کرنا ہے لیکن جلسہ کریں گے اور کنٹینرز کی بھی ایسی کی تیسی ہوجائے گی۔
مولانا نے واضح کیا کہ انصارالاسلام کوئی اسکواڈ نہیں بلکہ رضا کار ہیں اور ان کے ہاتھ میں تنظیمی امور ہوتے ہیں اجتماع کو سنبھالنے کے لیے، وہ اپنا بھرپور کردار ادا کر رہے ہیں۔
بات کو جاری رکھتے ہوئے انہوں نے کہا کہ یہ پوری قوم، پوری جماعت اور پوری پی ڈی ایم کے خادم ہیں اور جلسے کے سامنے رکاوٹوں کو دور کرنے میں کردار ادا کریں گے۔
وزیرقانون پنجاب کی جانب سے ایس او پیز کی خلاف ورزی پر گرفتاری سے متعلق سوال پر مولانا فضل الرحمٰن کا کہنا تھا کہ ہم انہیں پہلے گرفتار کرلیں گے وہ گرفتار کروانے والا کون ہوتا ہے۔
آصفہ بھٹو زرداری کی ملتان جلسے سے سیاست میں اینٹری سے متعلق سوال پر پی ڈٰی ایم کے صدر کا کہنا تھا کہ ہم انہیں خوش آمدید کہتے ہیں، وہ اپنی پارٹی کی نمائندگی کر رہی ہیں، ان کو یہ حق حاصل ہے اور یہ ان کی پارٹی کا اندرونی معاملہ ہے، جو بھی ان کی نمائندگی کرے گا پی ڈی ایم کی سطح پر کرے گا اور انہیں خوش آمدید کہا جائے گا۔
موبائل فون اور انٹرنیٹ سروس کی بندش پر مولانا فضل الرحمٰن کا کہنا تھا کہ کوئی رکاوٹیں کام نہیں آئیں گی، ہم جلسہ گاہ جائیں گے اور جہاں جو رکاوٹ ہوگی اس سے وہیں نمٹیں گے۔
اپوزیشن اتحاد پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ آج ملتان میں پاور شو کرنے جارہی ہے تاہم حکومتی اجازت نہ ہونے کے باعث جلسہ گاہ کے اطراف رکاوٹیں کھڑی کردی گئی ہیں جبکہ پی ڈی ایم جماعتوں کے کارکنان کی پکڑ دھکڑ بھی کی گئی تھی۔

یہ بھی پڑھیں

وزیراعظم عمران خان تو کہتے ہیں ہر معاملے کی رپورٹ پبلک ہونی چاہیے

وزیراعظم عمران خان تو کہتے ہیں ہر معاملے کی رپورٹ پبلک ہونی چاہیے

لاہور: ہائیکورٹ میں پٹرول بحران اور قیمتوں میں اضافہ سے متعلق کیس کی سماعت ہوئی …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے