سی ڈی اے کوتعمیرات کی ریگولرائز یشن کاعمل شفاف بنانے کاحکم دے دیا

سی ڈی اے کوتعمیرات کی ریگولرائز یشن کاعمل شفاف بنانے کاحکم دے دیا

اسلام آباد: جسٹس عمرعطا بندیال نے کہا کہ ہاؤسنگ سوسائٹیزکیلئےاپنا سیورج پلانٹ لگانے کی شرط این اوسی میں شامل ہونی چاہیئے، ہاؤسنگ سوسائٹیزکوآلودہ پانی کورنگ نالے میں ڈالنے سے روکا جائے

جسٹس عمرعطاء بندیال کی سربراہی میں سپریم کورٹ کے 3رکنی بینچ نے بنی گالہ تجاوزت از خود نوٹس پر سماعت کی۔
جسٹس عمر عطا بندیال نے مزید کہا کہ برساتی نالوں پرپانی کی ٹریٹمنٹ کے لگے پلانٹس آپریشنل نہیں ہوئے ، ٹریٹمنٹ پلانٹ کا ڈھانچہ بن چکا ہے لیکن فزیکل طورپرپلانٹ بحال نہیں ہوئے، سی ڈی اے عمارتوں کی ریگولرائزیشن کے عمل کوشفاف بنائے، ریگولرائزیشن کے عمل میں کسی قسم کی تفریق نہیں ہونی چاہیئے ،سی ڈی اے کی غفلت کی وجہ سے لوگوں کومسائل کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔
سپریم کورٹ نے سی ڈی اے کوتعمرات کی ریگولرائزیشن کا عمل شفاف بنانے کا حکم دےدیا اور کورنگ نالے کاپانی آلودہ کرنے پرسی ڈی اے سے جواب طلب کرلیا،
عدالت نے سی ڈی اے سے کورنگ نالے کے پانی سے متعلق رپورٹ طلب کرتے ہوئے کیس کی سماعت غیرمعینہ مدت کیلئے ملتوی کردی۔

یہ بھی پڑھیں

صدر مملکت نے چاروں گورنر اورعلماء کی ویڈیو کانفر نس آج

صدر مملکت نے چاروں گورنر اورعلماء کی ویڈیو کانفر نس آج

اسلام آباد: حکومت نے مساجد کیلئے ایس اوپیز کا از سرنو جائزہ لینے کا فیصلہ …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے