عدالت نے وزراء اور ایم این اے سمیت عوامی عہدیداروں کو انتخابی مہم میں حصہ لینے سے روک دیا

عدالت نے وزراء اور ایم این اے سمیت عوامی عہدیداروں کو انتخابی مہم میں حصہ لینے سے روک دیا

گلگت بلتستان: مرکزی عدالت کے 6 نومبر کے اس حکم کو چیلنج کیا تھا جس میں وفاقی وزیر برائے کشمیر امور اور اراکین قومی اسمبلی کو 3 دن میں گلگت بلتستان چھوڑنے کا حکم دیا تھا

پاکستان پیپلز پارٹی نے گلگت بلتستان کی چیف کورٹ کے 6 نومبر کے اس حکم کو چیلنج کیا تھا جس میں وفاقی وزیر امور کشمیر اور ایم این اے کو تین دن میں جی بی چھوڑنے کا حکم دیا گیا تھا۔
عدالت میں امجد حسین ایڈووکیٹ نے پیپلز پارٹی کی نمائندگی کی جبکہ منیر احمد ایڈووکیٹ نے الیکشن کمیشن کی جانب سے دلائل پیش کیے۔
دلائل سننے کے بعد گلگت بلتستان کے چیف جج سید ارشاد حسین شاہ اور سینئر جج جسٹس وزیر شکیل احمد نے کیس کا فیصلہ سنایا۔
عدالت نے وزراء اور اراکین قومی اسمبلی کو انتخابی مہم میں حصہ لینے سے روک دیا تاہم انہیں گلگت بلتستان سے نکالنے کا حکم نہیں دیا۔
گلگت بلتستان میں آئندہ روز ہونے والے انتخابات میں حتمی انتخابی سیکیورٹی پلان کے تحت پولنگ اسٹیشنز کی سیکیورٹی کے لیے جی بی، پنجاب ، سندھ ، خیبر پختونخوا، بلوچستان اور جی بی اسکاؤٹ، پاکستان رینجرز اور ایف سی کے 13 ہزار 810 سیکیورٹی اہلکار پولنگ اسٹیشنز کی سیکیورٹی کے لیے تعینات ہوں گے۔
گلگت بلتستان نگران حکومت فیض اللہ فراق نے بتایا کہ اس سلسلے میں ایک اعلی سطحی اجلاس مرکزی پولیس آفس گلگت میں ہوا۔
گلگت بلتستان میں ایک ہزار 161 پولنگ اسٹیشنز قائم کیے گئے ہیں ان میں سے 418 پولنگ اسٹیشنز کو انتہائی حساس اور 311 کو حساس قرار دیا گیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں

صدر مملکت نے چاروں گورنر اورعلماء کی ویڈیو کانفر نس آج

صدر مملکت نے چاروں گورنر اورعلماء کی ویڈیو کانفر نس آج

اسلام آباد: حکومت نے مساجد کیلئے ایس اوپیز کا از سرنو جائزہ لینے کا فیصلہ …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے