غیر ملکیوں کی آمد پر غیر ضروری پابندیاں گلگت بلتستان کی معیشت پر سرجیکل اسٹرائیک ہے، سعدیہ دانش

گلگت: پیپلز پارٹی گلگت بلتستان کی صوبائی سکریٹری اطلاعات سعدیہ دانش نے کہا ہے کہ وفاقی وزیرِ داخلہ کی جانب سے غیر ملکی سیاحوں کی آمد پر غیر ضروری پابندیاں گلگت بلتستان کی معیشت پر سرجیکل اسٹرائیک ہے۔سیاحتی سیزن کے آغاز پر 6 ماہ قبل اجازت لینے کی پابندی انتہائی غیر معقول ہے جبکہ یہاں سیاحتی سیزن ہی 5 ماہ کا ہوتا ہے۔دوسری طرف وفاقی وزیرِداخلہ سرمایہ کاروں کے روپ میں مشکوک لوگوں کو وزیرِاعظم کی ہدایت پر راتوں رات ویزے جاری کر رہے ہیں۔وزیراعلی اور وزراء کے سیاحت کی ترقی کے بلند بانگ دعوے محض لفاظی ثابت ہوئے ہیں۔موجودہ حکومت اس حوالے سے دو سالوں میں کوئی ایک کارنامہ دکھائے جو انہوں نے عملی طور پر انجام دیا ہو۔ یہی نہیں بلکہ صوبائی حکومت سکیورٹی کے نام پر گلگت بلتستان کے سیاحت سے وابستہ افراد اور ہوٹل انڈسٹری کو تباہ کرنے پر تلی ہوئی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ حکومت اگر سیاحوں کو سکیورٹی نہیں دے سکتی تو یہ ان کی شدید نااہلی ہے۔درحقیقت نواز لیگ کی وفاقی اور صوبائی حکومت ایک منصوبے کے تحت گلگت بلتستان کو ہر شعبے میں تنزلی کا شکار کرنا چاہتی ہیں۔ سعدیہ دانش نے مزید کہا کہ گلگت بلتستان میں سیاحوں کی آمد میں جو اضافہ ہوا ہے اسکی وجہ دراصل پیپلز پارٹی کے دور میں ہونے والے انقلابی اور تاریخی اقدامات ہیں جن میں 28 غیر ملکی سفیروں اور ڈپلومیٹس کی کانفرنس،سلک روٹ اور راما فیسٹول وغیرہ شامل ہیں،اپنے آپ کو شیر کہنے والے خود کوئی کام کرنے کے بجائے دراصل گِدھ بن کر پیپلز پارٹی کے منصوبوں پر گزارہ کر رہے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں

چترال ,اور گرد ونواح, میں زلزلے, کے, جھٹکے

چترال اور گرد ونواح میں زلزلے کے جھٹکے

چترال: زلزلہ پیما مرکز کے مطابق چترال اور گرد و نواح میں پیر کی صبح …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے