پہلی سہ ماہی میں براہ راست غیرملکی سرمایہ کاری 24فیصد کی کمی واقع ہوئی

پہلی سہ ماہی میں براہ راست غیرملکی سرمایہ کاری 24فیصد کی کمی واقع ہوئی

کراچی: اسٹیٹ بینک کے اعدادوشمار سے پتہ چلتا ہے کہ مالی سال 2021 میں جولائی سے ستمبر کے دوران غیر ملکی سرمایہ کاری کم ہو کر 41 کروڑ 57 لاکھ ڈالر ہو گئی جبکہ گزشتہ مالی سال اسی دورانیے میں یہ سرمایہ کاری 54 کروڑ 55 لاکھ ڈالر تھی اور اس لحاظ سے 23.8فیصد کمی واقع ہوئی

براہ راست غیرملکی سرمایہ کاری پہلے ہی کم تھی کیونکہ غیرملکی سرمایہ کاری کا حجم کم تھا جو پاکستان میں غیرملکی سرمایہ کاروں کی کم دلچسپی کی عکاسی کرتا ہے
دو ماہ میں غیر ملکی سرمایہ کاری گزشتہ مالی سال کے اسی عرصے کے مقابلے میں 40 فیصد بڑھ گئی تھی لیکن جولائی میں یہ تقریباً فلیٹ رہی تھی۔
تاہم ستمبر میں آنے والی رقوم اگست میں موصول ہونے والی 11کروڑ 23لاکھ ڈالر سے زیادہ تھی۔
چین کی سرمایہ کاری گزشتہ مالی سال کے مقابلے میں دگنی رہی، مالی سال 21 کی پہلی سہ ماہی کے دوران ملک کو 10کروڑ 36 لاکھ ڈالر موصول ہوئے جبکہ اس کے مقابلے میں پچھلے مالی سال کی رقم 5کروڑ 54 لاکھ ڈالر تھی، چین پچھلے کچھ سالوں میں سب سے بڑا سرمایہ کار رہا ہے۔
پہلی سہ ماہی میں ناروے سے آنے والی آمدنی نے مجموعی طور پر براہ راست غیر ملکی سرمایہ کاری کو فروغ دیا تھا کیونکہ ملک میں 24 کروڑ 80 لاکھ ڈالرز کی سرمایہ کاری کی گئی جبکہ مال سال 21 کی پہلی سہ ماہی میں یہ سرمایہ کاری محض 3کروڑ ڈالر تھی۔
ہانگ کانگ سے کی جانے والی سرمایہ کاری پہلی سہ ماہی کے دوران بڑھ کر3 کروڑ 84 لاکھ ڈالرز ہو گئی جبکہ گزشتہ مالی سال کے اسی عرصہ میں یہ صرف 69 لاکھ ڈالرز تھی۔
مالٹا سے ہونے والی سرمایہ کاری دونوں مالی سالوں کی پہلی سہ ماہی کے دوران5 کروڑ 56لاکھ ڈالرز رہی۔
گزشتہ مالی سال میں متحدہ عرب امارات کی جانب سے 2کروڑ 65 لاکھ ڈالرز کی سرمایہ کاری کی گئی جو اس سال کم ہو کر ایک کروڑ 89لاکھ ڈالرز رہ گئی۔
نیدرلینڈز سے آنے والی سرمایہ کاری بڑھ کر 4 کروڑ 90 لاکھ ڈالرز ہو گئی جبکہ گزشتہ سال اسی دورانیے میں ایک کروڑ 40 لاکھ ڈالرز کی سرمایہ کاری کی گئی تھی۔
مالی سال 21 کے دوران براہ راست غیرملکی سرمایہ کاری کی توجہ کا محور بجلی کا شعبہ تھا جس نے گزشتہ مالی سال کی اسی مدت میں 3کروڑ 23 لاکھ ڈالرز کے مقابلے میں اس سال 11کروڑ 33 لاکھ ڈالرز وصول کیے۔

یہ بھی پڑھیں

انڈس اسپتال میں کورونا وائرس کی ویکسین کا انسانی ٹرائل شروع ہوگیا

انڈس اسپتال میں کورونا وائرس کی ویکسین کا انسانی ٹرائل شروع ہوگیا

کراچی: چین کی دو کمپنیوں نے کورونا ویکسین پر کام کیا، پاکستان میں ویکسین کے …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے