ڈونلڈ ٹرمپ اور ان کی اہلیہ ملینیا ٹرمپ کورونا وائرس کا شکار

ڈونلڈ ٹرمپ اور ان کی اہلیہ ملینیا ٹرمپ کورونا وائرس کا شکار

امریکا: اس سے قبل مشیر اور معاون کا کورونا ٹیسٹ مثبت آنے پر امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ اور خاتون اول میلانیا ٹرمپ قرنطینہ کرنے کا اعلان کردیا تھا

امریکی صدر کے ڈاکٹر ڈاکٹر شان کونلی نے صحافیوں کو ایک خط جاری کیا جس میں امریکی صدر کا ٹیسٹ مثبت آنے کی تصدیق کی گئی
صدر اور خاتون اول دونوں اس وقت اچھے ہیں اور انہوں نے قرنطینہ میں وائٹ ہاؤس میں رہنے کا فیصلہ کیا ہے۔ شان کونلی نے مزید کہا کہ وائٹ ہاؤس کی میڈیکل ٹیم اور میں نگرانی کروں گا اور میں ملک کے بہترین پیشہ ورانہ اداروں اور اداروں کی جانب سے فراہم کی جانے والی مدد پر ان کو سراہتا ہوں۔
انہوں نے لکھا کہ مجھے امید ہے کہ صحت بہتر ہونے کے ساتھ ساتھ صدر مملکت بلاتعطل اپنے کام کا سلسلہ جاری رکھیں گے اور میں آپ کو اس حوالے سے اپ ڈیٹ کرنے کا سلسلہ جاری رکھیں گے۔
ملینیا ٹرمپ نے ٹوئٹر پر اپنے پیغام میں کہا کہ وہ اور ٹرمپ کورونا وائرس کا ٹیسٹ مثبت آنے کے بعد گھر میں قرنطینہ میں رہیں گے جیسے اس سال کئی امریکی رہ چکے ہیں۔
ان کا کہنا تھا کہ ہم اچھا محسوس کر رہے ہیں اور اپنی تمام مصروفیات کو ترک کردیا ہے۔
ٹرمپ کا ٹیسٹ مثبت آنے کا اعلان ایک ایسے موقع پر کیا گیا جب چند گھنٹے قبل ہی وائٹ ہاؤس نے اعلان کیا تھا کہ سینئر معاون خصوصی ہوپ ہکس وائرس کا شکار ہو گئے تھے اور وہ اس ہفتے امریکی صدر کے ساتھ کئی مرتبہ سفر کر چکے تھے۔
امریکی صدر کا کورونا وائرس کا شکار ہونا رواں سال الیکشن شیڈول کے تناظر میں خود ان کے لیے انتہائی کے لیے انتہائی خطرناک ثابت ہو چکا ہے کیونکہ وہ امریکی عوام کو قائل کرنے کے لیے کوشاں ہیں کہ کورونا وائرس کی بدترین وبا اب گزر چکی ہے۔
کورونا وائرس سے اب تک امریکا میں 2لاکھ سے زائد افراد موت کے منہ میں جا چکے ہیں اور وائرس کے خلاف امریکی عوام کے بڑھتے ہوئے تحفظات انتخابی عمل میں ان کی ناکامی کا شکار بن سکتے ہیں۔
ٹرمپ کو کئی مرتبہ خبردار کیا گیا کہ وہ بھی کورونا وائرس کا شکار ہو سکتے ہیں لیکن انہوں نے اس بات کو کبھی سنجیدگی سے نہی لیا بلکہ کئی مرتبہ اس کا مذاق بھی اڑا چکے تھے۔
ٹرمپ پہلے عالمی رہنما نہیں جو وائرس کا شکار ہوئے ہیں بلکہ ان سے قبل برطانوی وزیر اعظم بورس جانسن بھی کورونا کا شکار ہو کر کئی ہفتے ہسپتال میں گزار چکے ہیں جبکہ جرمن چانسلر اینجلا مرکل بھی ڈاکٹرز کی ہدایت پر قرنطینہ میں رہ چکی ہیں۔
کینیڈا کے وزیر اعظم جسٹن ٹروڈیو اور ان کی اہلیہ بھی وائرس کا شکار ہو گئے تھے اور انہوں نے مملکت کے امور گھر سے انجام دیے تھے۔
ابھی تک ٹرمپ کی صحت زیادہ سنگین نہیں لیکن اگر ان کی صحت بگڑتی ہے تو اس سے ان کے بقیہ مدت کے لیے صدر رہنے اور امور انجام دینے کی قابلیت پر اثر پڑ سکتا ہے۔

یہ بھی پڑھیں

صدر رجب طیب اردوان نے فرانس کے صدر ایمانیئول میکرون’دماغی معائنہ‘ کرانے کے لیے زور دیا ہے

صدر رجب طیب اردوان نے فرانس کے صدر ایمانیئول میکرون’دماغی معائنہ‘ کرانے کے لیے زور دیا ہے

استنبول: ترک صدر رجب طلب اردوان سے سخت ردعمل دیا تھا ہفتے کو کہا تھا …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے