وزیراعظم ہاﺅس کے روزمرہ اخراجات میں 10 فیصد اضافہ

اسلام آباد: وزیراعظم ہاﺅس کے روزمرہ اخراجات میں 10 فیصد اضافہ دیکھا گیا ہے اور یوں گزشتہ دو سالوں کے دوران اخراجات میں تقریباً 74 لاکھ روپے سالانہ اضافہ ہوا، وزیراعظم آفس کی تنخواہ اور دیگرمراعات سمیت روزانہ کا خرچہ مالی سال 2015-16ء کے دوران مجموعی اخراجات دولاکھ تیس ہزار سات سو ترانوے روپے جبکہ یہ اخراجات 2014-15ء کے دوران دو لاکھ دس ہزار چارسو ستانوے روپے تھے۔ یہ انکشاف قومی اسمبلی میں جمع کرائے گئے ایک تحریری جواب میں سامنے آیا۔پاکستان پیپلزپارٹی پارلیمنٹیرین کی ڈاکٹرشازیہ صوبیہ نے گزشتہ دوسال کے دوران وزیراعظم آفس کے اوسطاً اخراجات کے بارے میں استفسار کیا تھا جس کے بعد وزیراعظم آفس کے اخراجات کی تفصیلات فراہم کردی گئیں جن میں ہرسال تقریباً 9.64 فیصد اضافہ دیکھا گیا یعنی گزشتہ سال کے اخراجات کا تقابلی جائزہ لینے پر یہ بات سامنے آئی کہ 2015-16ء کے دوران گزشتہ سال کی نسبت وزیراعظم آفس کے روزمرہ اخراجات میں 20,296 روپے اضافہ ہوا جبکہ سالانہ 7.40 ملین یعنی 74 لاکھ روپے اضافہ ہوا۔ 
یہاں یہ امر بھی قابل ذکر ہے کہ قومی اسمبلی کو بتایا گیاکہ مالی سال 2015-16ء کے دوران وزیراعظم آفس کے اخراجات 84.23 ملین اور 2014-15ء کے درمیان اخراجات 76.83 ملین روپے تھے، دونوں سالوں کے درمیان اخراجات میں 7.4 ملین روپے کا فرق دیکھا گیا۔ ذرائع نے بتایاکہ وزیراعظم آفس کے دو مین سیکشنز ہیں جن میں ایک انٹرنل اور ایک پبلک سیکشن ہے، پبلک سیکشن عوامی اہمیت کے معاملات کو دیکھتا ہے جبکہ انٹرنل سیکشن وزیراعظم آفس اور دیگر کے درمیان معاملات کو دیکھتا ہے۔

یہ بھی پڑھیں

تاجروں و صنعتکاروں کا دباو اور ردعمل کام دکھا گیا

تاجروں و صنعتکاروں کا دباو اور ردعمل کام دکھا گیا

اسلام آباد: ایف بی آر نے انکم ٹیکس افسران کو کاروباری یونٹس و کاروباری مراکز …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے