طالب علموں کو سندھ میں 3 فیصد اضافی مارکس دیے گئے

طالب علموں کو سندھ میں 3 فیصد اضافی مارکس دیے گئے

کراچی :وزیرتعلیم سندھ سعید غنی کا کہنا تھا کہ طلبا کو پروموٹ کرنے سے متعلق بہت کام کیا گیا، دوسری جانب اکثریت کا یہی فیصلہ ہے کہ اسکول کھل جانے چاہئیں

انہوں نے کہا کہ 28ستمبر سے تمام کلاسوں میں تدریسی عمل شروع ہوجائے گا، والدین ایس اوپیز پر عمل درآمد کرائیں، تقریباً6 ماہ سے اسکول بند تھے۔
سعید غنی ملیر کے مختلف تعلیمی اداروں کے دورے پر گئے، صوبائی وزیر نے اسکول کے منتظمین کوایس اوپیز کا نفاذ یقینی بنانے کی ہدایت کی۔
اس موقع پر ان کا کہنا تھا کہ 28ستمبر سے متعلق تمام تیاریاں مکمل کی جائیں، ایک کلاس میں بچوں کے درمیان سماجی فاصلہ ہر ممکن یقینی بنایا جائے، اگر بچے زیادہ ہوں تو کلاسز کو شفٹوں یا متبادل دنوں میں لیا جائے۔
وزیرتعلیم نے مزید کہا کہ ایس او پیز کی خلاف ورزی کسی صورت برداشت نہیں کی جائے گی، ہم بچوں کی صحت پرکسی قسم کا سمجھوتہ نہیں کریں گے۔

یہ بھی پڑھیں

سینئر سرکاری عہدیداروں نے 1976 کے ڈرگ ایکٹ کی خلاف ورزی

سینئر سرکاری عہدیداروں نے 1976 کے ڈرگ ایکٹ کی خلاف ورزی

کراچی: سینئر عہدیداروں نے عام لوگوں کو فائدہ پہنچانے کے لیے ڈریپ کے کام کو …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے