نیب نے چوہدری شجاعت حسین اور چوہدری پرویز الہی کے خلاف انکوائری بند کردی

نیب نے چوہدری شجاعت حسین اور چوہدری پرویز الہی کے خلاف انکوائری بند کردی

لاہور:نیب لاہور نے چوہدری برادران کیخلاف بنکوں سے نادہندگی کی 20 سال پرانی انکوائری بند کرتے ہوئے رپورٹ لاہور ہائیکورٹ میں جمع کروا دی

نیب نے رپورٹ میں کہا کہ چوہدری برادران کیخلاف شواہد نہ ملنے پر بنک نادہندگی کی انکوائری بند کردی ہے۔ چوہدری برادران پر قرضہ حاصل کرنے کےلیے جو الزام ہے وہ ان پر لاگو نہیں ہوتا، لہذا ناکافی شواہد کی بنا پر انکوائری بند کی جاتی ہے۔
چوہدری برادران کیخلاف 12 اپریل 2000 میں انوسٹی گیشن شروع کی گئی تھی جو بعدازاں بند کردی گئی لیکن پھر اچانک 20 سال بعد 14 فروری 2019 کو دوبارہ 3 انوسٹی گیشن کی منظوری دی گئی۔
چوہدری شجاعت کیخلاف بطور وفاقی وزیر آمدن سے زائد اثاثے بنانے کا الزام ہے۔ جبکہ چوہدری پرویز الہی پر بطور اسپیکر اسمبلی آمدن سے زائد اثاثہ جات اور بطور سابق لوکل منسٹر غیر قانونی تعیناتیوں سمیت دیگر الزامات ہیں۔

یہ بھی پڑھیں

سلمان شہباز کے ملازمین کے بینک اکاؤنٹ میں بھی 9.5 ارب روپے کا انکشاف

سلمان شہباز کے ملازمین کے بینک اکاؤنٹ میں بھی 9.5 ارب روپے کا انکشاف

لاہور: ملازمین رمضان شوگر مل اور العریبیہ شوگر مل میں کام کرتے ہیں ایف آئی …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے