ملک بھر کے تعلیمی ادارےکھولنے کا حتمی فیصلہ 7 ستمبر کو کیا جائے گا : شفقت محمود

ملک بھر کے تعلیمی ادارےکھولنے کا حتمی فیصلہ 7 ستمبر کو کیا جائے گا : شفقت محمود

اسلام آباد : وزیر تعلیم شفقت محمود نے کہا ہے کہ تعلیمی ادارے کھولنے کا حتمی فیصلہ 7 ستمبر کو تمام اسٹیک ہولڈرز کے اتفاق رائے اور ان پٹ کے بعد کیا جائے گا۔

نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر میں ملک میں تعلیمی ادارے کھولنے پر یک نکاتی ایجنڈہ پر اجلاس ہوا۔ مدرسہ، پرائیویٹ اسکول سمیت تمام تعلیمی اداروں کے نمائندوں کو اجلاس میں دعوت دی گئی۔

یہ بھی پڑھیں :

یکم جون سے تعلیمی ادارے نہ کھولنے کا نوٹیفیکیشن جاری

اجلاس میں وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود، معاون خصوصی صحت ڈاکٹر فیصل سلطان سمیت اعلیٰ سول و عسکری حکام شریک ہوئے۔ آزاد کشمیر ، گلگت بلتستان کے نمائندے بھی اجلاس میں وڈیو لنک پر موجود تھے۔ اجلاس میں اسکول یونیورسٹیز سمیت تعلیمی ادارے کھولنے پر مشاورت کی گئی۔

فورم نے شرکاء کو کورونا کی موجودہ صورت حال اور تعلیمی ادارے کھولنے کے بعد رسک اور چیلنجز سے آگاہ کیا گیا۔

اس موقع پر شفقت محمود کا کہنا تھا کہ دو شعبوں میں تعلیمی اداروں کو کھولنا بنیادی چیلنج ہے۔ حفظان صحت کے لئے ماسک، سماجی دوری اور ایس او پیز پر عملدرآمد کے اقدامات یقینی بنایا جائے، تعلیمی ادارے کھولنے کا حتمی فیصلہ 7 ستمبر کو تمام اسٹیک ہولڈرز کے اتفاق رائے اور ان پٹ کے بعد کیا جائے گا۔

یہ بھی پڑھیں

عدالتی حکم پر عمل درآمد نہ کرنے والے افسران کی نشاندہی کریں

عدالتی حکم پر عمل درآمد نہ کرنے والے افسران کی نشاندہی کریں

اسلام آباد: چار سال سے لاپتہ آئی ٹی انجئنیر ساجد محمود کی بازیابی کے لیے …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے