ایف بی آر نے ملزمان کی چوری کے عزائم خاک میں ملا دیے

ایف بی آر نے ملزمان کی چوری کے عزائم خاک میں ملا دیے

لاہور:فوڈمینوفیکچرنگ یونٹ میں ٹیکس کا بڑا فراڈ کیا جارہا تھا لیکن ایف بی آر نے ملزمان کی چوری کے عزائم خاک میں ملا دیے

رجسٹرڈ یونٹ نے ٹیکس فراڈ کرکے اصل پیداوار اور فروخت کو چھپایا۔
فراڈ سے 4.36 ارب روپے کا واجب الادا سیلز ٹیکس چوری ہوا۔ مینوفیکچرنگ یونٹ پر 2.45 ارب روپے کا ڈیفالٹ سرچارج واجب الادا ہے۔ مینوفیکچرنگ یونٹ کو اب 4.36 ارب روپے کا جرمانہ بھی ادا کرنا ہوگا
واجب الاداسیلز ٹیکس کی ریکوری کے لیے کیس فیلڈ دفتر کو بھجوا دیا گیا ہے۔ ایف بی آر حکام نے اس اہم کارروائی کے بعد دیگر قانونی پہلوؤں پر بھی کام شروع کردیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں

حمزہ شہباز کی گھر کے کھانے کی درخواست پر تحریری حکم جاری کر دیا

حمزہ شہباز کی گھر کے کھانے کی درخواست پر تحریری حکم جاری کر دیا

لاہور: احتساب عدالت کے ایڈمن جج جواد الحسن نے حمزہ شہباز کی درخواست پر 2صفحات …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے