ریٹائرڈ جنرل راحیل شریف کے سعودی عرب پہنچتے ہی سعودی عسکری اتحاد کو بڑی کامیابی مل گئی، القاعدہ رہنما گرفتار

ریاض: سعودی عرب کی سربراہی میں عرب عسکری اتحاد نے یمن کی انسداد دہشت گردی فورسز کے ساتھ مشترکہ کارروائی میں القاعدہ کے اہم رہنماوں اور جنگجووں کی گرفتاری کا دعویٰ کیا ہے۔سعودی پریس ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق گرفتار ہونے والوں میں شدت پسند تنظیم القاعدہ کے سرکرہ رہنما احمد سعید عود برہمہ عرف زرقاوی بھی شامل ہیں۔رپورٹ کے مطابق یہ گرفتاریاں یمن کے شہر مکلا میں عرب اتحاد کے فضائی آپریشن کے نتیجے میں عمل میں آئیں جو القاعدہ کے خلاف یمنی آرمی کے آپریشن میں معاونت کے لیے کیا گیا۔آپریشن کے دوران دہشت گردوں کی سازشوں کو ناکام بنایا گیا اور ان کے قبضے سے بڑی تعداد میں اسلحہ اور دیگر آلات برآمد کیے گئے۔

واضح رہے کہ رواں ہفتے سعودی وزیر دفاع کے مشیر میجر جنرل احمد عسیری نے میڈیا کو بتایا تھا کہ عرب اتحاد کی توجہ محض بین الاقوامی دہشت گرد گروپس جیسے داعش یا القاعدہ سے نمٹنے میں مرکوز نہیں۔انہوں نے کہا تھا کہ عرب اتحاد ان باغی گروپس اور میلشیاوں کے خلاف بھی کارروائی کرسکتا ہے جنہیں وہ رکن ممالک کی سلامتی کے لیے خطرہ سمجھتا ہے۔عسیری کا کہنا تھا کہ مئی کے مہینے میں عرب اتحاد میں شامل ممالک کا اعلیٰ اجلاس ہوگا جس میں باضابطہ طور پر عسکری اتحاد کے قیام کا اعلان کیا جائے گا۔

انہوں نے کہا کہ اس اجلاس میں زیر بحث آنے والے ٹرمز آف ریفرنسز (ضابطہ کار) کو پارلیمانی سطح پر لے جایا جائے گا۔یاد رہے کہ عسکری اتحاد ابتدائی طور پر مسلم ممالک کے درمیان سیکیورٹی تعاون کے لیے پلیٹ فارم کی فراہمی کے لیے قائم کیا گیا تھا جس میں فوجیوں کی تربیت اور دفاعی آلات کی فراہمی کی بات کی گئی تھی جبکہ انسداد دہشت گردی نظریات کے فروغ کے لیے علما کی خدمات حاصل کرنے کی بھی تجویز سامنے آئی تھی۔

یہ بھی پڑھیں

پاکستان کی تاریخی سفارتی فتح، بھارتی مندوب حواس باختہ

پاکستان کی تاریخی سفارتی فتح

نیویارک سٹی: سلامتی کونسل کا اجلاس پاکستان کی تاریخی سفارتی فتح ہے جس پر بھارتی …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے