وزیراعظم کا استعفیٰ تحریک انصاف اور اپوزیشن جماعتوں کی خواہش ہے، مصدق ملک

اسلام آباد: وزیراعظم کے ترجمان مصدق ملک نے کہا ہے کہ سپریم کورٹ ہمیں ہٹاتی تو چلے جاتے لیکن تحریک انصاف کے کہنے پر نہیں جائیں گے، وزیراعظم عوام کا مینڈیٹ لے کر آئے، عوام ہی انہیں ہٹا سکتے ہیں، تحریک انصاف چور راستے تلاش کرنے کی بجائے عوام کی خدمت کرے اور ووٹ لے کر آئے۔ نجی ٹی وی کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے مصدق ملک نے کہا کہ پانامہ لیکس آنے کے بعد وزیراعظم نے اپنی تقریر میں کمیشن بنانے کا کہا جسے مسترد کر دیا گیا، انہوں نے ایف آئی اے کی تحقیقاتی ٹیم بنانے کا کہا اسے بھی رد کر دیا گیا، پھر انہوں نے سپریم کورٹ کو خط لکھا، سپریم کورٹ نے فیصلے میں مزید تحقیقات کا حکم دیا ہے، وزیراعظم کو نااہل نہیں کیا، اگر سپریم کورٹ ہٹانے کا کہتی تو ہم چلے جاتے۔ انہوں نے کہا کہ وزیراعظم کا استعفیٰ تحریک انصاف اور اپوزیشن جماعتوں کی خواہش ہے، ہم ان کے کہنے پر نہیں جائیں گے، وزیراعظم کے پاس عوامی مینڈیٹ ہے اور عوام ہی ان کو ہٹائے گی،  تحریک انصاف چور راستے تلاش کرنے کی بجائے عوام کی خدمت کرے اور ووٹ لے کر آئے۔ انہوں نے کہا کہ سعودی اتحاد یمن کے نہیں،  دہشتگردی کے خلاف ہے، راحیل شریف کی تقرری پارلیمان کی قرارداد کے خلاف نہیں، ہم پارلیمان کی قرارداد کی پاسداری کر رہے ہیں اور کوئی بھی چیز پارلیمانی قرارداد کے خلاف نہیں ہو رہی۔

یہ بھی پڑھیں

جنرل قمر جاوید باجوہ مزید 3 سال کیلئے آرمی چیف مقرر

جنرل قمر جاوید باجوہ مزید 3 سال کیلئے آرمی چیف مقرر

وزیراعظم عمران خان نے جنرل قمر جاوید باجوہ کو مزید 3 سال کے لیے آرمی …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے