جب جنگ ہوگی تو کوئی امریکی فوجی اپنی جگہ سے ہل بھی نہ سکے گا اور ہم اس ہتھیار سے سب تباہ کردیں گے، روس

ماسکو: تیسری عالمی جنگ کا خطرہ دنیا پر منڈلارہا ہے اور امریکی افواج روس کو چاروں جانب سے گھیرا ڈالنے کیلئے آگے بڑھ رہی ہیں، مگر اس موقع پر روس نے ایک ایسی دھمکی دے ڈالی ہے کہ امریکہ کی بڑھتی ہوئی فوجوں کے قدم لڑکھڑانے لگے ہیں۔ ڈیلی سٹار کی رپورٹ کے مطابق روس کا کہنا ہے کہ اگر امریکہ نے جنگ کی غلطی کی تو اس کا نیا ہتھیار ’الیکٹرونک بم‘ امریکہ کے تمام ہتھیاروں اور جنگی آلات کو ایک ہی وار میں تباہ و برباد کردینے کیلئے کافی ہوگا۔ روسی میڈیا میں سامنے آنے والی ویڈیوز میں روسی فوجیوں کو مشق کرتے ہوئے دکھایا گیا ہے کہ کس طرح وہ الیکٹرونک بم کا استعمال کرکے امریکہ کے بحری بیڑوں کی الیکٹرونک کمیونیکیشن منجمد کردیں گے۔

ویڈیو میں امریکہ کو سخت پیغام دیتے ہوئے کہا گیا ہے ”جیتنے کیلئے آپ کو مہنگے ہتھیاروں کی ضرورت نہیں ہوتی، طاقتور ریڈیو الیکٹرونک جیمنگ ہی کافی ہے۔“ ایک SU-24 بمبار طیارے کے ذریعے الیکٹرونک جیمنگ ہتھیار کے استعمال کے مناظر دکھائے گئے ہیں جو ایک جنگی بحری جہاز کے الیکٹرونک سگنل منجمد کرکے اسے ناکارہ بنانے کا عملی مظاہرہ کرتے ہوئے دکھایا گیا ہے۔

 

روسی حکام کا کہنا ہے کہ پہلے بھی اس ہتھیار کی وجہ سے امریکہ کو شرمندگی اٹھانے پر مجبور کیا جاچکا ہے لیکن دونوں ممالک کے درمیان جنگ کی صورت میں اس کے تمام جنگی آلات کو ایک ہی حملے میں ناکارہ بنادیا جائے گا۔ روس نے اس نئے ہتھیار کے ساتھ ہی ریڈیو الیکٹرونک جیمنگ ڈوم نامی ٹیکنالوجی کا انکشاف بھی کیا ہے جو اس کی سرحدوں پر طاقتور الیکٹرونک لہروں کا خول بنا کر اسے دشمن کے طیاروں سے مکمل طور پر محفوظ کرسکتی ہے۔ اسی طرح جیمنگ ٹیکنالوجی کی مدد سے دشمن کے میزائلوں کا رُخ بدلنے کی طاقت کے حامل ہتھیاروں کا انکشاف بھی کیا گیا ہے۔

دفاعی تجزیہ کاروں کا کہنا ہے کہ امریکہ کی جانب سے افغانستان میں ”تمام بموں کی ماں“ گرائے جانے کے بعد یہ سمجھا جارہا ہے کہ تیسری عالمی جنگ کا بگل بج چکا ہے۔ روس بھی امریکہ کی جانب سے کسی ممکنہ جارحیت کے خدشے کے پیش نظر اپنی تیاریاں مکمل کررہا ہے، اور اس کشیدہ صورتحال میں کچھ بعید نہیں کہ کسی بھی لمحے ایک خوفناک جنگ کا آغاز ہوجائے۔

یہ بھی پڑھیں

بھارت لائن آف کنٹرول پر اشتعال انگیزی کے ساتھ آبی جارحیت پر بھی اتر آیا ہے اور اس نے بڑے سیلابی ریلوں کا رخ پاکستان کی جانب موڑ دیا ہے جس کے باعث پاکستانی دریاؤں میں بڑے پیمانے پر سیلاب کا خطرہ پیدا ہو گیا ہے۔ ترجمان این ڈی ایم اے کے مطابق بھارت نے لداخ ڈیم کے 3 اسپل ویز کھول دیئے ہیں جن کا پانی خرمنگ کے مقام پر دریائے سندھ میں شامل ہو گا۔ سیلاب کے خطرے کے پیش نظر گلگت بلتستان ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی نے الرٹ جاری کر دیا ہے۔ اس کے علاوہ بھارت نے دریائے ستلج میں بھی بڑا سیلابی ریلا چھوڑ دیا ہے۔ ڈیزاسٹر منیجمنٹ اتھارٹی پنجاب کے حکام کا کہنا ہے کہ سیلابی ریلہ آج دن 11 بجے ہیڈگنڈا سنگھ والا کے مقام سے پاکستان میں داخل ہو گا اور پھر 30 گھنٹے بعد ہیڈ سلیمان کے راستے بہاول نگر میں داخل ہو گا۔ ترجمان این ڈی ایم اے بریگیڈئیر مختار احمد کے مطابق دریائے ستلج میں بھارتی پنجاب سے آنے والے پانی کے بڑے ریلے کی وجہ سے سیلاب کا خطرہ ہے۔ بریگیڈئیر مختار احمد کا کہنا ہے کہ محتاط اندازے کے مطابق ڈیڑھ سے 2 لاکھ کیوسک پانی پاکستانی حدود میں داخل ہو سکتا ہے۔ پی ڈی ایم اے پنجاب نے ضلع قصور اور اطراف کے اضلاع کی انتظامیہ کو کسی بھی ہنگامی صورتحال کے لیے تیار رہنے کی ہدایت کی ہے۔ بھارت نے سندھ طاس معاہدہ عملاً معطل کر دیا ہے: ڈپٹی کمشنر انڈس واٹر جیو نیوز سے گفتگو کرتے ہوئے پاکستان کے ڈپٹی انڈس واٹر کمشنر شیراز میمن نے کہا ہے کہ بھارت کی جانب سے مسلسل آبی جارحیت جاری ہے، اس نے سندھ طاس معاہدے کو عملاً معطل کر دیا ہے۔ شیراز میمن نے کہا کہ بھارت نے ہر قسم کی واٹر ڈیٹا شیئرنگ بند کر دی ہے اور ڈیموں سے پانی کے اخراج پر پیشگی اطلاع نہیں دی، وہ مسلسل سندھ طاس معاہدے کی خلاف ورزی کر رہا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ بھارت نے یکم جولائی سے ستمبر تک کا دریاوں کا ڈیٹا بھی نہیں بھیجا، کئی ماہ سے دونوں ملکوں کے شیڈول اجلاس بھی نہیں ہو رہے، بھارتی رویئے سے حکومت کو آگاہ کر دیا ہے۔ دریائے ستلج میں درمیانے اور اونچے درجے کے سیلاب کا خدشہ فلڈ فورکاسٹنگ ڈویژن نے نئی ایڈوائزری جاری کر دی ہے جس کے مطابق دریائے ستلج میں درمیانے اور اونچے درجے کے سیلاب کا خدشہ ظاہر کیا گیا ہے۔ فلڈ فورکاسٹنگ ڈویژن کے مطابق 20 اور 21 اگست سے گنڈا سنگھ والا پر بہاؤ 80 تا 90 ہزار کیوسک ہونےکا امکان ہے جو ڈیڑھ لاکھ کیوسک تک بھی جا سکتا ہے۔ فورکاسٹنگ ڈویژن کا کہنا ہے کہ 23 اگست سے ہیڈ سلیمانکی پر بھی بہاؤ بڑھنے کا امکان ہے۔ گزشتہ72گھنٹے میں راوی، بیاس اور ستلج کے بالائی علاقوں میں انتہائی شدید بارشیں ہوئیں جس کی وجہ سے بھاکرہ ڈیم اور زیر علاقوں سے آنے والا پانی سیلاب کا باعث بن رہا ہے۔ فلڈ فورکاسٹنگ ڈویژن نے متعلقہ اداروں کو احتیاطی تدابیر اختیار کرنے کی ہدایت کی ہے۔

بھارت کنٹرول لائن پر اشتعال انگیزی کے ساتھ آبی جارحیت پر بھی اتر آیا

بھارت لائن آف کنٹرول پر اشتعال انگیزی کے ساتھ آبی جارحیت پر بھی اتر آیا …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے