ڈیوٹی ڈرا بیک عالمی تجارتی تنظیم قوانین کے ساتھ ملکی قوانین کے تحت بھی آتا ہے

ڈیوٹی ڈرا بیک عالمی تجارتی تنظیم قوانین کے ساتھ ملکی قوانین کے تحت بھی آتا ہے

کراچی: اجلاس کے دوران بریفنگ میں کہا گیا کہ وزارت تجارت نے ری کیلکولیشن کے لیے 11 شعبوں کا انتخاب کیا تھا چمڑہ، پلاسٹک سامان اور قالین کے نظرثانی شدہ نرخوں پر کام مکمل ہوگیا، 8 سیکٹرز کے لیے مشق آخری مراحل میں ہے،

جلد حتمی شکل دی جائے گی۔ مشیرتجارت نے کیمیکلز، انجینئرنگ، آئرن اینڈ اسٹیل، سرامکس اور دواسازی پر بھی توجہ دینے پر زور دیا۔
اجلاس سے متعلق جاری کردہ اعلامیہ کے مطابق کسٹم ایکٹ1969، کسٹم رولز اور ڈرا بیکس کی ادائیگی کے طریقہ کار کاجائزہ لیا گیا، ڈیوٹی ڈرابیکس کو برآمدکنندگان کے اکاؤنٹس میں جمع کیا جائے گا، پاکستان کسٹمزڈیٹابیس اور اسٹیٹ بینک ڈیٹا شیئرنگ کے لیے محفوظ لائن کی ضرورت ہے۔
اعلامیہ میں کہنا تھا کہ نئے قواعد کے تحت کسٹم ڈیوٹی، ایڈیشنل کسٹمزڈیوٹی اور ڈیوٹی ڈرا بیک کا حصہ ہوں گے، خصوصی کسٹمزڈیوٹی اور ریگولیٹری ڈیوٹی سمیت ڈیوٹی ڈرا بیک کا حصہ ہوں گے، ڈیوٹی ڈرا بیک کے عمل کو پریشانی سے بچنے کے لیے اقدام کررہے ہیں، 8ایچ ایس کوڈ کے بجائے 6اور4ایچ ایس کوڈ پر شرح کے حساب کی مشق کی جائے۔

یہ بھی پڑھیں

کراچی سرکلر ریلوے عوام کے ساتھ بھونڈا مذاق ہے

کراچی سرکلر ریلوے عوام کے ساتھ بھونڈا مذاق ہے

کراچی: حافظ نعیم الرحمن نے جماعت اسلامی کے مرکز ادارہ نورِ حق کراچی میں پریس …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے