انتہائی ایمرجنسی آپریشن میں سپورٹ کریں گے، ترجمان رینجرز سندھ

کراچی: ترجمان رینجرزکا کہنا ہے کہ سندھ میں رینجرز کے پاس آپریشن، تلاشی اورگرفتاری کے اختیارات 15 اپریل سے ختم ہوچکے ہیں تاہم انتہائی ایمرجنسی آپریشن یا ضرورت کے تحت بیک اپ سپورٹ دیں گے۔ترجمان رینجرز کی جانب سے جاری اعلامیے کے مطابق سندھ میں پاکستان رینجرز کو آپریشن، تلاشی اورگرفتاری کے اختیارات حاصل تھے جو 15 اپریل سے ختم ہوچکے ہیں جب کہ سندھ حکومت کے ضابطہ کار یکم اگست 2016 کے تحت رینجرز آزادانہ حیثیت میں کسی آپریشن کو بروئے کار نہیں لاسکتی۔ ترجمان کا کہنا تھا کہ رینجرز آئین کی شق 147 کے تحت کراچی میں موجود ہے اور اہم مقامات کی حفاظت اس کے فرائض میں شامل ہے جب کہ انتہائی ایمرجنسی آپریشن یا ضرورت کے تحت بیک اپ سپورٹ دیں گے۔

یہ بھی پڑھیں

مختلف عناصر تینوں کو ناکام ثابت کرنے کیلیے نکاسی و فراہمی آب کا نظام خراب کرنے کو متحرک

مختلف عناصر تینوں کو ناکام ثابت کرنے کیلیے نکاسی و فراہمی آب کا نظام خراب کرنے کو متحرک

کراچی: صوبائی اور وفاقی حکومت کے درمیان سیاسی رسہ کشی بھی جاری ہے۔ ملکی معاشی …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے