مشال خان پر توہین اسلام کا الزام، یونیورسٹی سے معطلی کا نوٹیفکیشن کس نے جاری کیا، معمہ حل نہ ہوسکا

مردان: عبدالولی خان یونیورسٹی کے منتظم فیاض علی شاہ نے کہا ہے کہ طالب علم مشال خان کی یونیورسٹی سے معطلی کا نوٹیفکیشن انتظامیہ نے جاری نہیں کیا۔تفصیلات کے مطابق فیاض علی شاہ نے کہا کہ یونیورسٹی کا سامنے آنے والا نوٹیفکیشن انتظامیہ نے جاری نہیں کیا گیا اور اس میں کافی غلطیاں بھی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اگرچہ یہ نوٹیفکیشن اسسٹنٹ رجسٹرار کے دستخط سے جاری ہوا ہے تاہم رجسٹرار کے علم میں یہ بات نہیں ہے اور مجھے بھی اس سے متعلق لاعلم رکھا گیا۔ان کا کہنا تھا کہ اس معاملے پر کمیٹی بنانے سے متعلق صرف فیصلہ ہوا تھا اور یہ فیصلہ بھی مشتعل طلبہ کو روکنے کیلئے کیا گیا تھا مگر اس اس دوران مشال خان کے قتل کا واقعہ ہو گیا۔

یہ بھی پڑھیں

پاک افغان سرحد کے قریبی علاقے شورکی میں ایک مسجد و امام بارگاہ میں دھماکا

پاک افغان سرحد کے قریبی علاقے شورکی میں ایک مسجد و امام بارگاہ میں دھماکا

 لوئر کرم: پولیس نے تصدیق کی کہ دھماکے کے نتیجے میں زخمی ہونے والا شخص …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے