رضا ربانی کو منانے میں اسحاق ڈار ناکام، چیئرمین سینیٹ کا احتجاج برقرار

اسلام آباد: حکومتی رویے سے نالاں ہو کر رضا ربانی نے احتجاجاً بطور چیرمین سینیٹ کام بند کردیا جس کے بعد اسحاق ڈار نے انہیں منانے کی کوشش کی جس میں انہیں ناکامی کا سامنا کرنا پڑا۔ تفصیلات کے مطابق چیرمین سینیٹ مسلسل دو روز سے حکومتی وزراء کے ایوان میں نہ آنے پر برہم تھے اور صبح اجلاس شروع ہوا تو ایسا ہی ہوا جس پر انہوں نے 35 منٹ کے لئے سینیٹ کا اجلاس ملتوی کردیا تاہم اس کے بعد بھی وقفہ سوالات کا جواب دینے کے لئے کوئی بھی وزیر اور سیکرٹری نہ آیا تو رضا ربانی نے سینیٹ کے قاعدہ نمبر 23 کے تحت ایوان کا اجلاس غیر معینہ مدت تک کے لئے ملتوی کردیا۔

رضا ربانی کے دفتر میں جب کچھ فائلیں بھیجی گئی تو وہ بھی انہوں نے واپس کر دیں اور کہا کہ جب اختیارات نہیں ہیں تو کام کا کوئی فائدہ نہیں، اس کے علاوہ انہوں نے اپنا دورہ ایران بھی منسوخ کردیا۔ رضا ربانی کا کہنا تھا کہ نا تو وزراء اور نا ہی سیکرٹریز وقفہ سوالات کے جوابات دیتے ہیں، اگر حکومت کو مجھ سے کوئی مسئلہ ہے تو میں اپنے عہدے سے مستعفی ہو جاتا ہوں لیکن ایوان کا وقار کسی صورت مجروح نہیں ہونے دیں گے۔

دوسری جانب وزیرخزانہ اسحاق ڈار چیئرمین سینیٹ کے منانے کے لئے ان کی رہائش گاہ گئے جہاں دونوں کے درمیان کافی دیر تک مذاکرات ہوئے تاہم رضا ربانی نے کسی بھی یقین دہانی کو قبول کرنے سے صاف انکار کردیا اور مطالبہ کیا کہ وزیراعظم وزرا کی ایوان میں موجودگی کی یقین دہانی کرائیں جس کے بعد مذاکرات کی ناکامی پراسحاق ڈار واپس روانہ ہوگئے۔

یہ بھی پڑھیں

انتخابات, میں , کام یابی پر, نریندر مودی کو مبارک باد

انتخابات میں کام یابی پر نریندر مودی کو مبارک باد

اسلام آباد: وزیر اعظم عمران خان نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر مودی …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے