سشانت سنگھ کی خودکشی کےحوالے سے تحقیقات

سشانت سنگھ کی خودکشی کےحوالے سے تحقیقات

بالی وڈ اداکار سشانت سنگھ راجپوت کی خودکشی کی حوالے سے تا حال تحقیقات کی جارہی ہیں جب کہ حال ہی میں یہ بات بھی سامنے آئی ہے کہ اداکار ڈپریشن کی 2 خطرناک بیماریوں میں مبتلا تھے

سشانت سنگھ راجپوت کی خودکشی کے معاملے پر تفتیش کرنے والے ایک پولیس افسر نے انکشاف کیا ہے کہ اداکار ڈپریشن کی 2 بیماریوں کا علاج کروا رہے تھے جب کہ لاک ڈاؤن سے ایک ہفتہ قبل وہ ہندوجا اسپتال میں علاج کرانے کی غرض سے اسپتال میں داخل بھی ہوئے تھے۔
پولیس کا کہنا ہے کہ سشانت سنگھ ‘پیرانویا’ اور ‘بائپولر ڈس آرڈر’ کی خطرناک بیماریوں میں مبتلا تھے۔
پولیس کا مزید کہنا تھا کہ اداکار اپنی مصروفیات کے باوجود بھی خود کو اکیلا محسوس کرتے تھے اور یہ بات ان کے گواہوں سے پوچھ گچھ کے بعد سامنے آئی ہے۔
اداکار سشانت سنگھ راجپوت کی خودکشی کو ایک مہینہ گزر چکا ہے اور 14 جون سے اب تک باندرا پولیس اداکار کی موت کے معاملے کی تفتیش کر رہی ہے اور اس سلسلے میں اب تک تقریباً 3 درجن لوگوں سے پوچھ گچھ بھی کرچکی ہے۔
14 جون کو 34 سالہ اداکار سشانت سنگھ نے مبینہ طور پر اپنے گھر میں پنکھے سے لٹک کر خود کشی کرلی تھی۔
اداکار سشانت سنگھ نے اپنے کیرئیر کا آغاز ڈرامہ ‘کس دیش میں ہے میرا دل’ سے کیا تھا بعد ازاں انہوں نے فلم ‘پی کے’ میں سرفراز کا کردار ادا کیا جس سے وہ کافی مقبول ہوئے۔

یہ بھی پڑھیں

پاکستانی لیجنڈری گلوکار راحت فتح علی خان عید سے قبل عوام کو تحفہ

پاکستانی لیجنڈری گلوکار راحت فتح علی خان عید سے قبل عوام کو تحفہ

کراچی: راحت فتح علی کا نیا گانا غمِ عاشقی چاند رات کو ریلیز ہوگا جو …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے