مویشی منڈی میں ماسک کے بغیر خریداروں کا داخلہ ممنوع ہے

مویشی منڈی میں ماسک کے بغیر خریداروں کا داخلہ ممنوع ہے

کراچی: مویشی منڈی کی رونقوں میں بھی اضافہ ہورہا ہے تاہم کورونا کی وبا کے پیش نظر حفاظتی ایس او پیز پر سختی سے عمل کیا جارہا ہے، مویشی منڈی میں ماسک کے بغیر خریداروں کا داخلہ ممنوع

سپر ہائی وے پر ٹرکوں کی طویل قطاریں اپنی باری کی منتظر ہیں ہر گزرتے دن کے ساتھ قربانی کے جانوروں کی آمد میں اضافہ ہورہا ہے، مویشی منڈی میں مجموعی طور پر 48 بلاکس بنائے گئے ہیں اس سال منڈی میں مزید 5 نئے بلاکس کا اضافہ کیا گیا ہے، 22 وی آئی پی بلاکس، پرائم پٹی اور جنرل بلاکس پر مشتمل مویشی منڈی میں اس سال 5 لاکھ کے لگ بھگ جانوروں کی آمد کا تخمینہ لگایا گیا ہے، منڈی میں 6 لاکھ مویشیوں کی گنجائش ہے۔
کراچی میں ایشیا کی سب سے بڑی مویشی منڈی میں لائے گئے جانوروں کی قیمتیں آسمان سے باتیں کررہی ہیں بیوپاریوں لاکھوں روپے سے کم پر بات کرنے کے لیے آمادہ نظر نہیں آتے وہیں شہری اپنی مالی حیثیت اور گنجائش کے مطابق مناسب جانور کی تلاش میں سرگرداں نظر آتے ہیں۔
بیوپاری گزشتہ سال کے مقابلے میں دگنی قیمت مانگ رہے ہیں جبکہ بیوپاریوں کا کہنا ہے کہ مویشیوں کی دیکھ بھال، ٹرانسپورٹ اور منڈی کے اخراجات کی وجہ سے جانوروں کو لاگت سے کم پر نہیں بیچ سکتے، بیوپاریوں کا کہنا ہے کہ راستے میں جگہ جگہ پولیس کے ناکوں اور چنگیوں پر فی جانور کے حساب سے نذرانہ وصول کیا جاتا ہے ہیلتھ سرٹیفکیٹ کے حصول کے لیے بھی مقررہ فیس سے زائد رقوم طلب کی جاتی ہے۔
مویشی منڈی کے منتظمین کے مطابق کورونا وبا کے باعث اس سال منڈی کا رقبہ وسیع کردیا گیا ہے تاکہ سماجی فاصلہ برقرار رکھا جاسکے، منڈی میں کورونا کی حفاظتی تدابیر پر سختی سے عمل درآمد کیا جارہا ہے تمام داخلی راستوں اوربلاکس میں ڈس انفیکشن گیٹ کے ساتھ ہاتھ دھونے کے لیے ٹینکرز اور ٹنکیاں نصب کی گئی ہیں جن کے ذریعے گاہکوں کو ہاتھ دھونے کی سہولت فراہم کی جارہی ہے روزانہ کی بنیاد پرآنے والے شہریوں، بیوپاریوں پر اسپرے اور جانوروں پر بھی جراثیم کش اسپرے کیا جارہا ہے،
شہریوں کی بڑی تعداد مویشی منڈی میں حفاظتی تدابیر کی خلاف ورزی کرتی نظر آرہی ہے منڈی کے چور دروازوں اور ملحقہ رہائشی علاقوں سے گزرکر بچے بھی منڈی پہنچ رہے ہیں جبکہ نوجوانوں کی ٹولیاں حفاظتی ماسک پہنے بغیر گھومتی نظر آرہی ہیں، منڈی کے منتظمین کا دعویٰ ہے کہ انتظامیہ کے رضاکار منڈی میں گشت کرکے خریداروں کو حفاظتی ایس او پیز اختیار کرنے کی تلقین کرتے ہیں اور بچوں کو یا ایس او پی کی خلاف ورزی کرنے و الوں کو منڈی کی حدود سے باہر کردیا جاتا ہے۔

یہ بھی پڑھیں

کراچی سرکلر ریلوے عوام کے ساتھ بھونڈا مذاق ہے

کراچی سرکلر ریلوے عوام کے ساتھ بھونڈا مذاق ہے

کراچی: حافظ نعیم الرحمن نے جماعت اسلامی کے مرکز ادارہ نورِ حق کراچی میں پریس …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے