کراچی میں جرم اور سیاست ساتھ ساتھ چلتے رہے

کراچی میں جرم اور سیاست ساتھ ساتھ چلتے رہے

کراچی: وفاقی وزیر علی زیدی نے لیاری گینگ وار کے سرغنہ عزیر بلوچ کے قریبی ساتھی حبیب جان بلوچ کی ایک ویڈیو ٹوئٹر پر شیئر کی ہے۔ ویڈیو کے ساتھ انہوں نے لکھا ہے کہ جرم اور سیاست ایک ساتھ چلتے رہے

آصف زرداری اور قادر پٹیل ایک بار پھر بے نقاب ہوگئے، انہیں حبیب جان نے بےنقاب کردیا، جو سارے معاملے میں شامل تھا۔
ایک منٹ 57 سیکنڈز کی اس ویڈیو میں اس ویڈیو میں حبیب جان بلوچ کا کہنا ہے کہ 2012 میں لیاری میں آپریشن کے بعد پیپلز پارٹی نے ایک مرتبہ پھر عزیر جان بلوچ سے رابطہ کیا اور انہیں منانے کے لیے 5 کروڑ روپے ادا کئے گئے۔ جس کے بعد عزیر جان بلوچ پیپلز پارٹی میں شامل ہوئے، عزیر بلوچ کی دعوت پر قائم علی شاہ، شرمیلا فاروقی اور فریال تالپور بھی آئے۔
لیاری پولیس افسران کے تبادلوں کے حوالے سے حبیب جان بلوچ نے کہا کہ ایک گروپ کراچی میں بہت سرگرم تھا جو آئی جی سندھ تک کے تبادلے کی طاقت رکھتا تھا ، وزارت داخلہ ان کے دروازے پر رحمان ملک کی صورت میں کھڑی رہتی تھی۔
عزیر بلوچ اور آصف زرداری کے درمیان ملاقات سے متعلق حبیب جان بلوچ کا کہنا تھا کہ ایک مرتبہ عزیر بلوچ کا انہیں فون آیا کہ آصف زرداری ان سے ملنا چاہتے ہیں اور اس ملاقات کے لیے قادر پٹیل کے ساتھ جانا ہے۔ آصف زرداری کی خواہش تھی کہ ان کے منہ بولے بھائی لیاری سے الیکشن لڑیں۔ اس میں کوئی شک نہیں کہ آصف زرداری یاروں کے یار ہیں اور ہمارے بھی بڑے یارانے تھے، درمیان میں اویس مظفر ٹپی آگئے، یہیں سے جھگڑے کی بنیاد پڑی۔

یہ بھی پڑھیں

کراچی سرکلر ریلوے عوام کے ساتھ بھونڈا مذاق ہے

کراچی سرکلر ریلوے عوام کے ساتھ بھونڈا مذاق ہے

کراچی: حافظ نعیم الرحمن نے جماعت اسلامی کے مرکز ادارہ نورِ حق کراچی میں پریس …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے