اس وقت نان ایشوز کو ایشو بنا کر عوام کی توجہ اصل مسائل سے ہٹا دی گئی ہے

اس وقت نان ایشوز کو ایشو بنا کر عوام کی توجہ اصل مسائل سے ہٹا دی گئی ہے

کراچی: صوبائی وزیر نے کہا کہ پی پی پی حکومت نے آپریشن ناکام ہونے کے بعد کراچی اور لیاری میں امن کے لیے مذاکرات کیے، اگر حکومتیں دہشت گردوں سے بات چیت کرتی ہیں تو اس کا مطلب یہ نہیں کہ وہ ان کے جرائم میں شامل ہیں

صوبائی وزیر بلدیات ناصر حسین شاہ کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اس وقت پوری دنیا میں پی آئی اے پر پابندی عائد کردی گئی ہے، اتنا نقصان پی آئی اے کی نا اہل انتظامیہ نے نہیں پہنچایا جتنا اس حکومت کے وزرا نے پہنچایا ہے۔
وفاقی حکومت پی آئی اے کو بھی اسٹیل ملز کی طرح زمین بوس کرنا چاہتی ہے۔
سعید غنی نے بتایا کہ پی ٹی آئی کے ایم پی اے اسرار اللہ گنڈا پور ایک خود کش دھماکے میں جاں بحق ہوئے جن کے بھائی نے بیان دیا کہ میں اور پولیس ملزمان کی تلاش میں رہے اور مجھے ذرائع سے کچھ معلومات ملیں جس کی میں نے تصدیق کی کہ اس دھماکے میں علی امین گنڈا پور کے بھائی ملوث ہیں۔
علی زیدی کو سخت تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ وفاقی وزیر بن گئے لیکن عقل نہیں آئی، ایم این اے بن گئے ہیں لیکن کونسلر بننے کے لائق بھی نہیں ہیں۔
سعید غنی کا مزید کہنا تھا کہ شوکت خانم کے چندے کے 30 لاکھ ڈالر علی زیدی نے اپنے اکاؤنٹ میں ڈلوالیے تھے، عزیر بلوچ نے کہا کہ پی ٹی آئی سمیت کئی سیاسی جماعتوں نے شمولیت کی پیشکش کی گئی۔
علی زیدی، عارف علوی اور عمران اسمٰعیل نے امن کمیٹی کو پی ٹی آئی میں شامل کرنے کے لیے ایک کمیٹی بنائی لیکن اسد عمر نے اس کمیٹی میں شامل ہونے سے انکار کردیا۔
صوبائی وزیر نے کہا کہ کراچی میں پی ٹی آئی نے دھرنا دیا جس میں امن کمیٹی کے اراکین آتے رہے اور اسٹیج پر بیٹھتے رہے حبیب جان نے دھرنے سے ٹیلیفونک خطاب بھی کیا۔
پریس کانفرنس میں وزیر بلدیات ناصر حسین شاہ نے بتایا کہ وزیراعلیٰ سندھ سے ڈی ایم سیز کے نالوں کی صفائی کے لیے علیحدہ فنڈز دیے ہیں۔
انہوں نے بتایا کہ اگست کے اختتام تک کراچی کے نالوں کی صفائی مکمل کرلی جائے گی اور اس میں عالمی بینک کی معاونت بھی حاصل ہے۔

یہ بھی پڑھیں

پچھلے 20 سال میں کراچی میں کچھ نہیں کیا گیا

پچھلے 20 سال میں کراچی میں کچھ نہیں کیا گیا

کراچی: سپریم کورٹ کراچی رجسٹری میں چیف جسٹس پاکستان جسٹس گلزار احمد کی سربراہی میں …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے