ایس بی سی اے انجینئرزنے بارشیں شروع ہوتے ہی عمارتوں کا سروے کیا

ایس بی سی اے انجینئرزنے بارشیں شروع ہوتے ہی عمارتوں کا سروے کیا

کراچی: سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی نے صدر ٹاؤن ،لیاری ٹاؤن اور لیاقت آباد ٹاؤن میں مزید 10 سے زائد شکستہ اور مخدوش عمارتوں کو خطرناک اور ناقابل استعمال قراردیتے ہوئے مکینوں کو عمارتیں فوری خالی کرنے سے متعلق انتباہی نوٹس جاری

سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی کے ڈائریکٹرجنرل کی خصوصی ہدایات پر ماہرین تعمیرات اور انجینئرز پر مشتمل کمیٹی برائے خطرناک عمارات نے حالیہ مون سون بارشوں کے فوری بعد لیاقت آباد ،صدر اور لیاری ٹاؤن میں مختلف عمارتوں کا سروے کیا جس کے نتیجے میں ان علاقوں کی مزید 10 سے زائد عمارتوں کو خطرناک اور ناقابل رہائش اور استعمال قرار دیا ہے جس کے بعد ایس بی سی اے کی جانب سے 422 عمارتوں کی فہرست میں مزید اضافہ ہوگیا ہے۔
تمام خطرناک قراردی گئی عمارتوں کو فوری طور پر خالی کرنے سے متعلق مکینوں کو انتباہی نوٹس جاری کردیے گئے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں

پچھلے 20 سال میں کراچی میں کچھ نہیں کیا گیا

پچھلے 20 سال میں کراچی میں کچھ نہیں کیا گیا

کراچی: سپریم کورٹ کراچی رجسٹری میں چیف جسٹس پاکستان جسٹس گلزار احمد کی سربراہی میں …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے