عدم دلچسپی کے باعث اورنج لائن بس منصوبہ پر ترقیاتی کام بحال نہیں ہوسکا

عدم دلچسپی کے باعث اورنج لائن بس منصوبہ پر ترقیاتی کام بحال نہیں ہوسکا

کراچی: مالی سال2020-21کے بجٹ میں اگرچہ سندھ حکومت نے اورنج لائن کے لیے 843.3ملین روپے مختص کیے ہیں لیکن رواں مالی سال کے بجٹ میں فنڈز جاری نہ ہونے کے باعث ترقیاتی کام بند پڑا ہے

اورنج لائن بس منصوبہ سندھ ماس ٹرانزٹ اتھارٹی کی زیر نگرانی2016میں شروع کیا گیا تھا اور اسے ایک سال میں مکمل کیا جانا تھا لیکن ساڑھے چار سال گذرجانے کے باوجود اس کا 75فیصد کام مکمل ہوا ہے۔
سندھ حکومت کے ذرائع کے مطابق سندھ حکومت کے اعلیٰ حکام نے اپنے مذموم مقاصد کے لیے سندھ ماس ٹرانزٹ اتھارٹی اور صوبائی محکمہ ٹرانسپورٹ میں سیاسی بنیادوں پر افسران تعینات کررکھے ہیں جن کی نااہلیت کی وجہ سے یہ منصوبہ سست روی کا شکار ہے۔
اورنج لائن بس منصوبہ کے لیے بسوں کی خریداری اور ان کا آپریشنل مینجمنٹ بھی سندھ ماس ٹرانزٹ اتھارٹی کی ذمے داری ہے۔

یہ بھی پڑھیں

انڈس اسپتال میں کورونا وائرس کی ویکسین کا انسانی ٹرائل شروع ہوگیا

انڈس اسپتال میں کورونا وائرس کی ویکسین کا انسانی ٹرائل شروع ہوگیا

کراچی: چین کی دو کمپنیوں نے کورونا ویکسین پر کام کیا، پاکستان میں ویکسین کے …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے