سعودی فوجی اتحاد میں پاک فوج کی شمولیت کیخلاف پارلیمنٹ میں احتجاج کریں گے، شیریں مزاری

اسلام آباد: پاکستان کی اہم سیاسی جماعت تحریک انصاف کی رہنما شیریں مزاری نے کہا ہے کہ  حکومت نے پارلیمنٹ میں دیے جانے والے بیان کے خلاف سعودی اتحاد سے متعلق فیصلہ کیا ہے جس کے خلاف پارلیمنٹ میں احتجاج کریں گے۔  انہوں نے کہا کہ ایوان کو کچھ عرصے پہلے کچھ اور بتایا گیا، پالیسی میں تبدیلی کا علم وزیردفاع خواجہ آصف کے ٹی وی انٹرویو سے ہوا۔

شیریں مزاری نے کہا کہ پاکستان سعودی فوجی اتحاد میں شمولیت کے بجائے صرف ثالثی کی حد تک کردار ادا کرے، ورنہ مسائل پیدا ہوں گے۔ شیریں مزاری کا کہنا تھا کہ معلوم نہیں کہ راحیل شریف کو کس حیثیت اور کن شرائط کی بنیاد پر سعودی فوجی اتحاد کا سربراہ بنایا گیا۔ واضح رہے کہ پاکستان میں سیاسی اور مذہبی جماعتیں اوراسی طرح اس ملک کی سیاسی شخصیات نے راحیل شریف کو سعودی فوجی اتحاد کا سربراہ بنائے جانے کی شدید مخالفت کرتے ہوئے اسے پاکستانی مفادات کے خلاف قراردیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں

بجلی چوری, پر, قابو پانے سے, اٹھاون ارب روپے, حاصل ہوئے

بجلی چوری پر قابو پانے سے اٹھاون ارب روپے حاصل ہوئے

اسلام آباد: بجلی کے بلوں کی وصولی میں اکیاسی ارب روپے کے اضافہ پر وزیراعظم …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے