پلاسٹک سرجن ڈاکٹرفہد مرزا نے حال ہی میں مجسمہ سازی میں مہارت دکھاتے ہوئے

پلاسٹک سرجن ڈاکٹرفہد مرزا نے حال ہی میں مجسمہ سازی میں مہارت دکھاتے ہوئے

فہد مرزا نے اس حوالے سے مزید وضاحت کرتے ہوئے لکھا، “سوال یہ تھا کہ میں اسے روح کیسے دوں گا، آنکھیں ۔۔۔ آنکھیں روح کی کھڑکیاں ہیں ، تو خواتین وحضرات ہماری امید اب اندھی اور ظالم نہیں ہے

یہ امید کی ایک خوش کن اور پیاربھری علامت ہے”
اس سے قبل انسٹا پوسٹ میں فہد مرزاکاکہنا تھا کہ وہ گھرمیں رہتے ہوئے اپنے تخلیقی پہلو کوکھوج رہے ہیں۔
اپنے بنائے ہوئے مجسمے کی تصویر شیئر کرتے ہوئے فہد نے لکھا تھا ” بالاآخر یہ مکمل ہوچکی ہے، میرے خیال سے فطرت کے حسین تر مناظرمیں سے ایک ہے جب عورت پانی سے نکل رہی ہو اور میرے سکلپچر میں یہی دکھایا گیا ہے”
ڈاکٹرفہد مرزا نے پرستاروں سے اپنے بنائے گئے مجسمے کا نام تجویز کرنےکو کہتے ہئے لکھا تھا کہ دیکھتے ہیں وہ اس کام میں کتنے تخلیقی ہوسکتے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں

مشتاق احمد یوسفی آج بھی اپنی تحریروں کے ذریعے زندہ ہیں

مشتاق احمد یوسفی آج بھی اپنی تحریروں کے ذریعے زندہ ہیں

کراچی: مشتاق احمد یوسفی 4 ستمبر 1923ء کو جے پور راجستھان (بھارت) میں پیدا ہوئے۔ …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے