بجٹ میں حکومت نے کورونا سے لڑتے غریبوں کے لئے کوئی پیسہ نہیں رکھا

بجٹ میں حکومت نے کورونا سے لڑتے غریبوں کے لئے کوئی پیسہ نہیں رکھا

لاہور:مسلم لیگ (ن) کے صدر اور قائد حزب اختلاف شہبازشریف نے آئندہ مالی سال کے بجٹ میں غریبوں کے لئے کوئی ریلیف نہ ہونے اور سبسڈیز میں کٹوتی کی مذمت کرتے ہوئے

لاک ڈاؤن نہ کرنے کی کنفیوز پالیسی سے غیر موثر لاک ڈاؤن تک حکومت وبا کے پھیلاؤ کو روکنے میں ناکام رہی ، بجٹ اعداد و شمار ظاہر کرتے ہیں کہ حکومت نے کورونا کے خلاف جنگ میں ہتھیار ڈال دئیے ہیں، این ڈی ایم اے کے لئے وسائل 25 ارب سے کم کرکے 5 ارب کردئیے گئے ہیں ، حکومت نے طے کرلیا ہے کہ عوام اور کورونا خود ہی ایک دوسرے سے نمٹ لیں۔
اپوزیشن لیڈر کا کہنا تھا کہ حکومت کے پاس بڑی کمپنیوں کے لئے اربوں روپے تھے لیکن غریبوں کو دینے کے لئے کچھ نہیں، بجٹ میں حکومت نے کورونا سے لڑتے غریبوں کے لئے کوئی پیسہ نہیں رکھا۔ حکومت نے مزدوروں کی مدد کی مد میں 75 ارب کے بجٹ میں کمی کردی ہے۔ یوٹیلیٹی اسٹورز کے لئے سبسڈی 10 ارب سے کم کرکے آئندہ سال کے لئے صفر کردی گئی ہے۔ بجلی صارفین کی مدد کیلئے10 ارب روپے کی رقم بھی بجٹ میں صفر کردی گئی.

یہ بھی پڑھیں

نیب احتساب کا نہیں،پولیٹیکل انجینئرنگ کا ادارہ ہے

نیب احتساب کا نہیں،پولیٹیکل انجینئرنگ کا ادارہ ہے

لاہور: رانا ثناءاللہ نے کہا ہے کہ نیب احتساب کا نہیں،پولیٹیکل انجینئرنگ کا ادارہ ہے،چیئرمین …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے