مریضوں کی زندگیاں خطرے میں پڑ گئی

مریضوں کی زندگیاں خطرے میں پڑ گئی

کراچی: جان بچانے والی ادویات اور بالخصوص کورونا وائرس سے متاثرہ ایمرجنسی میں داخل مریضوں کے لیے درکار انجکشن اور دیگر ادویات کی اسپتالوں اور ہول سیل مارکیٹوں میں سپلائی کو بند کردیا گیا

عاطف بلو نے مطالبہ کیا ہے کہ وفاقی حکومت اور وفاقی وزارت صحت فوری طور پر اس کا نوٹس لے اور ان کے خلاف کارروائی کرے، محمد عاطف بلو نے کہا ہے کہ اس وقت ملک اور بالخصوص صوبہ سندھ اور اس کے شہر کراچی میں کرونا وائرس جس تیزی سے پھیل رہا ہے اس نے جہاں ان متاثرہ مریضوں کے لیے مشکلات پیدا کر دی ہیں
بلکہ ان مریضوں کے اہلخانہ کو دہرے عذاب میں مبتلا کردیا ہے۔
محمد عاطف بلو نے کہا ہے کہ اس وقت ایمرجنسی میں درکار ادویات اور بالخصوص کرونا وائرس کے متاثرہ مریضوں کو لگنے والے انجکشن مارکیٹ سے غائب کردیے گیے ہیں اور ان انجکشن کو بنانے والی کمپنیوں نے اس کی مارکیٹ میں سپلائی بند کرکے بحران پیدا کردیا ہے
ادویات ساز کمپنیز نے ایکٹمرا (ACTEMRA) نامی انجکشن کی سپلائی اسپتالوں میں روکی جس کے سبب بحران پیدا ہوگیا ہے اور اب اس انجکشن کو بلیک مارکیٹ میں فروخت کیا جارہا ہے۔

یہ بھی پڑھیں

لی مارکیٹ میں عوام کیلئے سہولیات سے لیس نئے بیت الخلا قائم

لی مارکیٹ میں عوام کیلئے سہولیات سے لیس نئے بیت الخلا قائم

کراچی: بیت الخلا دو خواتین کے لیے اور دو مردوں کے لیے پاکستان کے پہلے …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے