سعودی فوجی اتحاد میں پاکستان کی شمولیت سے اسلامی دنیا میں امن قائم کرنے میں کوئی مدد نہیں ملے گی، ایرانی سفیر

اسلام آباد: پاکستان میں ایران کے سفیر مہدی ہنر دوست نے سعودی فوجی اتحاد کے قیام پر نکتہ چینی کرتے ہوئے کہا ہے کہ عالم اسلام کو جنگ کے لئے نہیں امن کے لئے متحد ہونے کی ضرورت ہے۔ ایرانی سفیر مہدی ہنر دوست نے ایک پاکستانی نیوز چینل سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان کو خود ساختہ سعودی فوجی اتحاد میں شامل ہونے کے بجائے، عالم اسلام میں پائی جانے والی کشیدگی اور کدورتوں کے خاتمے کے لئے اپنی توانائیاں صرف کرنی چاہیں۔

یمن کے بے گناہ عوام کے خلاف قائم سعودی فوجی اتحاد کی قیادت کے لئے سابق فوجی سربراہ جنرل راحیل شریف کے بارے میں ہونے والے اسلام آباد ریاض سمجھوتے کی جانب اشارہ کرتے ہوئے ایران کے سفیر نے کہا کہ ایران سمجھتا ہے کہ اسلامی ملکوں کے درمیان بہت زیادہ کشیدگی پائی جاتی ہے، جسے دور کرنے کے لئے ہمیں امن و اتحاد کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران امت مسلمہ کے درمیان کشیدگی کے خاتمے کے لئے بارہا اپنی آمادگی کا اعلان کر چکا ہے۔

پاکستان میں ایران کے سفیر نے یہ بات زور دیکر کہی کہ سعودی عرب کے خود ساختہ فوجی اتحاد میں پاکستان کی شمولیت سے خطے اور اسلامی دنیا میں امن قائم کرنے میں کوئی مدد نہیں ملے گی۔ انہوں نے امید ظاہر کی کہ پاکستان کے دانا و بابصیرت رہنما ایران کے سوالات کا جواب اور شکوک و شبہات کو دور کرنے کی کوشش کریں گے۔

یہ بھی پڑھیں

پیپلز پارٹی کے ساتھ مسئلہ یہ ہے کہ جو جیل میں ہیں وہ باہر آنا چاہتے ہیں

پیپلز پارٹی کے ساتھ مسئلہ یہ ہے کہ جو جیل میں ہیں وہ باہر آنا چاہتے ہیں

اسلام آباد: پیپلز پارٹی رہنما مولانا فضل الرحمٰن یا دیگر رہنما سے براہ راست بات …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے