صدر مملکت کے کمپیوٹر میں فحش فلمیں کس نے ڈالیں؟

پراگ: عام شہریوں کے کمپیوٹرز کی سکیورٹی صورتحال کا اندازہ اس امر سے لگایا جا سکتا ہے کہ گزشتہ دنوں ہیکرز نے جمہوریہ چیک کے صدر میلوس زیمن کا کمپیوٹر ہیک کر لیا اور اس میں ایسی شرمناک چیز ڈال دی کہ وہ دیکھ کر ششدر رہ گئے۔ نیوز ویب سائٹ eblnews.comکی رپورٹ کے مطابق میلوس زیمن نے گزشتہ روز اپنا کمپیوٹر کھولا تو اس میں بچوں کی فحش ویڈیوز دیکھ کر دن رہ گئے۔ ان کا کہنا تھا کہ ”مجھے یقین ہی نہیں آ رہا تھا۔ میں نے 10سیکنڈ تک ایک فلم کو چلا کر دیکھا تو وہ واقعی فحش فلم تھی۔ تب مجھے احساس ہوا کہ میرے کمپیوٹر پر ہیکرز حملہ کر چکے ہیں۔“

 

صدر ہاﺅس کے آئی ٹی ماہرین نے حملہ کرنے والے ہیکرز کا سراغ لگا لیا ہے۔ انہوں نے بتایا ہے کہ یہ حملہ امریکی ریاست الباما سے کیا گیا۔واضح رہے کہ چیک ری پبلک کے سیاستدانوں کے کمپیوٹرز پر یہ پہلا حملہ نہیں ہے۔ 2016ءکے اوائل میں ملک کے وزیراعظم بوہسلیو سوبوتکا کا ای میل اور ٹوئٹر اکاﺅنٹ ہیک کر لیا گیا تھااور ان سے درجنوں جعلی پیغامات لوگوں کو بھیجے گئے تھے۔2013ءمیں زیمن کی پارٹی ایس پی او کی ویب سائٹ ہیک کرکے اس پر فحش تصاویر آویزاں کر دی گئی تھیں۔

یہ بھی پڑھیں

امریکی صدر نے سعودی عرب میں اضافی فوجی بھیجنے کی منظوری دے دی

امریکی صدر نے سعودی عرب میں اضافی فوجی بھیجنے کی منظوری دے دی

واشنگٹن: فوجی بھیجنے کا فیصلہ امریکی قومی سلامتی کے اعلیٰ سطح اجلاس میں کیا گیا، …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے