چینی عدالت نے پاکستانی طالبعلم کو قتل کرنے والے شہری کو سزائے موت سنادی

چینی عدالت نے پاکستانی طالبعلم کو قتل کرنے والے شہری کو سزائے موت سنادی

بیجنگ: عدالت نے اپنے فیصلے میں کہا کہ کہ کونگ کو ایک بالغ شخص ہیں اور اسے معلوم ہونا چاہیے تھا کہ سینے اور پیٹھ میں چھری گھونپنا ہلاکت کا باعث بن سکتا ہے، اس کے باوجود مقتول پر پے در پے وار کیے گئے

عدالت نے کہا کہ کونگ کے عمل سےظاہرہے وہ قتل کرنا چاہتا تھا، واردات کے بعد کونگ اپنی دوست شاؤ کے گھرچھپ گیا،پولیس نے آٹھ گھنٹے بعد گرفتار کرلیا۔
عدالت نے وکیل صفائی کے دلائل مسترد کردئیے کہ جھگڑا مقتول کے اشتعال دلانے پر ہوا۔
عدالت نے شاؤ کو اپنے دوست کونگ کو پناہ دینے کے جرم میں سترہ ماہ قید کی سزا سنائی اور کہا شاؤ کو پناہ دیتے وقت علم نہیں تھا کہ معزالدین ہلاک ہو چکا ہیں ، اس لیے وہ کم سزا کی مستحق ہیں۔
معیزالدین چین کی نانجِنگ یونیورسٹی میں زیرتعلیم تھے، دوبرس قبل بازار سے گزرتے ہوئے کونگ کی بائیک معیز سے ٹکرائی،کونگ نے جھگڑے کے دوران چھری سے معیز کو قتل کردیا تھا۔

یہ بھی پڑھیں

الٹرا سپر سونک میزائل "ایون گارڈ" کیا ہے

الٹرا سپر سونک میزائل "ایون گارڈ” کیا ہے

روس: صدرپیوٹن کا کہنا تھا کہ امریکہ کی جانب سے اینٹی بیلسٹک میزائل ٹریٹی کے …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے