جب اقتدار سنبھالا تو صوبے میں مذہبی و فرقہ وارانہ دہشت گردی عروج پر تھی، وزیراعلیٰ بلوچستان

کوئٹہ: وزیراعلیٰ بلوچستان نواب ثناء اللہ خان زہری نے کہا ہے کہ ہم نے سیکورٹی فورسز کی قربانیوں اور عوام کے تعاون سے صوبے سے خوف کے آسیب کا خاتمہ کر دیا ہے، ضرب عضب اور آپریشن رد الفساد کی بدولت ملک بھر کی طرح بلوچستان میں بھی امن کی صورتحال میں بہتری آئی ہے، دیرپا امن کے قیام کو یقینی بنایا جا رہا ہے، عوام کے جان و مال کا تحفظ ہماری ذمہ داری ہے اور پرامن اور پڑھے لکھے بلوچستان کا قیام ہمارا عزم ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے پی ایف یو جے کے نو منتخب عہدیداروں سے  گفتگو  کرتے ہوئے وزیر اعلیٰ بلوچستان نے کوئٹہ میں پی ایف یو جے کے انتخابات کے انعقاد اور اس میں ملک بھر سے سینئر صحافیوں کی شرکت کو صوبے میں امن و امان کی صورتحال کی بہتری پر ذرائع ابلاغ کے اعتماد کا اظہار قرار دیتے ہوئے کہا کہ دیگر صوبوں سے آئے ہوئے صحافیوں کو یہاں کے زمینی حقائق اور اصل صورتحال کے مشاہدے کا موقع ملا ہے جس سے منفی تاثر اور پروپیگنڈہ زائل کرنے میں مدد ملے گی۔

 وزیراعلیٰ بلوچستان  نے کہا کہ یقینا کچھ عرصہ قبل تک صوبے کے حالات خراب تھے یہاں خوف کا عالم تھا مذہبی وفرقہ وارانہ دہشت گردی اور انتہا پسندی عروج پر تھی ،نام و نہاد آزادی کے نام پر بے گناہوں کی ٹارگٹ کلنگ کی جا رہی تھی، جب ہم نے اقتدار سنبھالا تو فیصلہ کیا کہ ہم کبوتر کی طرح آنکھیں بند نہیں کریں گے بلکہ ڈٹ کر دہشت گردوں کا مقابلہ کیا جائیگا ،اللہ تعالیٰ کے فضل و کرم سے ہمیں اس میں کامیابی ملی اور 95فیصد تک دہشت گردی پر قابو پا لیا گیا ہے۔نواب ثناء اللہ خان زہری نے کہا کہ عوام کے جان و مال کا ہر صورت تحفظ کیا جائیگا اور امن کے قیام کے لیے دی جانے والی قربانیوں کو کسی طور بھی رائیگاں نہیں جانے دیا جائیگا۔

انہوں نے میڈیا پر زور دیا کہ وہ صوبے میں امن و استحکام اور ترقیاتی عمل کو اجاگر کرنے میں اپنا بھرپور کردار ادا کریں تاکہ پوری قوم کو اس سے آگاہی حاصل ہو سکے، صوبے میں اطلاعات تک رسائی کا ایکٹ نافذ العمل ہے اور اس کی افادیت کو مزید موثر بنایا جائیگا۔ انہوں نے کہا کہ عامل صحافیوں کی فلاح و بہبود اور ان کے مسائل کے حل کے ساتھ ساتھ انہیں تحفظ کی فراہمی کے لیے صوبائی حکومت کی جانب سے جاری تعاون کو مزید وسعت دی جائے گی۔

یہ بھی پڑھیں

بگٹی کرکٹ اسٹیڈیم میں واحد ایک روزہ میچ 1996 میں کھیلاگیا تھا

بگٹی کرکٹ اسٹیڈیم میں واحد ایک روزہ میچ 1996 میں کھیلاگیا تھا

کوئٹہ: میزبان ٹیم 28 سے 31 اکتوبر تک خیبر پختونخوا جبکہ 4 سے 7 نومبر …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے