پنجاب یونیورسٹی میں پشتون کلچرل ڈے پر اسلامی جمعیت طلبہ کے کارکنوں کا حملہ، 5 طالب علم زخمی

لاہور: پنجاب یونیورسٹی میں  پشتون کلچرل ڈے پر اسلامی جمعیت طلبہ کے کارکنوں کا حملہ، 5طالب علم زخمی ہو گئے ، پتھراؤ سے 2 پولیس اہلکار بھی زخمی ہیں۔ تفصیلات کے مطابق پنجاب یونیورسٹی میں پشتون کلچر ڈے کے حوالے سے تقریب کا انعقاد جاری تھا جس میں پشتو ترانوں اور نغموں کو بلند آواز میں چلایا جا رہا تھا تاہم اسلامی جمعیت طلبہ کے کارکنوں نے آواز کم کرنے کا مطالبہ کیا جس پر کلچرل ڈے کے منتظمین اور جمعیت کے کارکن آمنے سامنے آگئیں ، دونوں جانب سے ایک دوسرے پر شدید پتھراؤکیا گیا جس سے 5طالب علم زخمی ہو گئے ۔ واقعے کے بعد پولیس کی بھاری نفری پنجاب یونیورسٹی پہنچ گئی جنہوں نے مشتعل طلبا کو منتشر کرنے کیلئے آنسو گیس کا استعمال کیا ۔ پنجاب یونیورسٹی کے ترجمان کا کہنا ہے کہ دونوں گروپ اپنا اپنا کلچر ڈے منا رہے تھے تاہم واقعے کے ذمہ داروں کا تعین کرنے کیلئے کمیٹی بنا دی ہے اورصورت حال پر قابو پا لیا گیا ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ جمعیت نے پشتون کلچر ڈے کے اسٹالز اکھاڑ دیے ۔زخمی طلباءکو ہسپتال منتقل کردیا گیا ہے اور پولیس کی مزید نفری کو طلب کر لیا گیا ہے ۔

یہ بھی پڑھیں

سندھ حکومت کے نکمے پن کی وجہ سے سندھ کو آٹا بحران کا سامنا کرنا پڑا

سندھ حکومت کے نکمے پن کی وجہ سے سندھ کو آٹا بحران کا سامنا کرنا پڑا

لاہور: وزیر اطلاعات فیاض الحسن چوہان اور وزیر خوراک سمیع اللہ چوہدری نے مشترکہ نیوز …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے