موٹروے نجی کمپنی کو دینے سے قومی خزانہ کو 205 ارب روپے کا نقصان

لاہور: سابق وزیر مملکت انصاف و پارلیمانی امور مہرین انور راجہ نے کہا ہے کہ اسلام آباد لاہور موٹروے نجی کمپنی کو دینے سے قومی خزانہ کو 205 ارب روپے کا نقصان ہوا ہے ۔ نجی کمپنی 20 سال تک موٹروے پر چلنے والی گاڑیوں سے ٹیکس وصول کرے گی، ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ موٹروے نجی کمپنی کو دینا غیر قانونی اقدام ہے جس کی تحقیقات ہونی چاہیے، جس کمپنی کو یہ ٹھیکہ دیا گیا ہے اس کمپنی نے تو درخواست بھی نہیں دی تھی لیکن پھر بھی اس کمپنی کو ٹھیکہ دے دیا گیا ہے۔

انہوں نے کہاکہ حکومت من مانیاں کر رہی ہے، قو می خزانہ کو نقصان پہنچایا جا رہا ہے، عوام کے مسائل حل کرنے کے لئے کچھ نہیں کیا جا رہا ہے، قومی وسائل کا تحفظ نہیں کیا جا رہا، عوام مشکلات کا شکار ہیں لیکن ان کی مشکلات حل کرنے کے لئے حکمران سنجیدہ نہیں ۔

یہ بھی پڑھیں

نیب نے چوہدری شجاعت حسین اور چوہدری پرویز الہی کے خلاف انکوائری بند کردی

نیب نے چوہدری شجاعت حسین اور چوہدری پرویز الہی کے خلاف انکوائری بند کردی

لاہور:نیب لاہور نے چوہدری برادران کیخلاف بنکوں سے نادہندگی کی 20 سال پرانی انکوائری بند …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے