نیوزی لینڈ نے قانون کی پاسداری نہ کرنے پر امریکی سفیر کو ملک بدر کردیا

ویلنگٹن: ڈونلڈ ٹرمپ کیلئے ایک اور جھٹکا، نیوزی لینڈ نے قانون کی پاسداری نہ کرنے پر امریکی سفیر کو ملک بدر کر دیا۔ اے آر وائے نیوز کے مطابق نیوزی لینڈ کی وزارت خارجہ نے قوانین کا احترام نہ کرنے پر امریکی سفیر کو ملک سے نکال دیا ، سفیر کو امریکی سفارتخانے کی جانب سے استثنیٰ کا حق استعمال کرتے ہوئے پولیس کو تفتیش کی اجازت نہ دینے کے بعد امریکی سفارتکار کو ملک سے نکالا گیا۔ نیوزی لینڈ کی وزارت خارجہ نے مؤقف اختیار کیا ہے کہ امریکہ نے سفارتی استثناءکا سہارا لیتے ہوئے اپنے سفیر کو تفتیش کے لئے پولیس کے حوالے نہیں کیا جس پر حکام نے سفارت خانے کو ہدایت جاری کی کہ مذکورہ سفارت کار کو قوانین کا احترام نہ کرنے کی پاداش میں نیوزی لینڈ سے واپس بھیج دیا جائے۔

واضح رہے کہ نیوزی لینڈ میں کام کرنے والے تمام سفارتی عملے کو 1961ءکے ویانا معاہدے کے تحت قانونی کارروائی سے استثنیٰ حاصل ہے۔ نیوزی لینڈ کی وزارت خارجہ کا کہنا ہے کہ نیوزی لینڈ میں تمام سفارتی عملے پر واضح کیا ہے کہ غیرملکی سفارتکار نیوزی لینڈ کے قانون کا احترام کریں اوراگرسخت جرائم کے الزامات ہیں تو استثنیٰ کا حق استعمال نہ کریں۔

یہ بھی پڑھیں

نائب افغان صدر کے قافلے پر بم حملہ ہوا جس کے نتیجے میں 10 افراد ہلاک

نائب افغان صدر کے قافلے پر بم حملہ ہوا جس کے نتیجے میں 10 افراد ہلاک

کابل: آج صبح افغانستان کے دارالحکومت کابل میں سڑک کنارے بم دھماکے کے نتیجے میں …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے