فوری طور پر ایمرجنسی وارڈ اور اوپی ڈی کھولنے کا حکم

فوری طور پر ایمرجنسی وارڈ اور اوپی ڈی کھولنے کا حکم

کراچی: جسٹس محمد علی مظہر اور جسٹس یوسف علی سعید پر مشتمل دو رکنی بینچ کے روبرو دیگر امراض میں مبتلا مریضوں کا علاج نہ کرنے کیخلاف درخواست کی سماعت ہوئی

عدالت نے دیگر امراض میں مبتلا مریضوں کا علاج نہ کرنے پر سرکاری اور پرائیوٹ انتظامیہ پر برہمی کا اظہار کیا۔
جسٹس محمد علی مظہر نے پوچھا کہ کیا دیگر امراض میں مبتلا مریضوں کاپہلے کورونا ٹیسٹ کرانا ضروری ہے؟ غریب طبقہ علاج کیلئے سرکاری اسپتالوں کا رخ کرتا ہے، اگر سرکاری اسپتالوں کی انتظامیہ کا رویہ درست نہیں ہوا تو کیسے چلے گا، جناح اسپتال کی سیمی جمالی کیا کررہی ہیں، کیا انہیں اسپتال نہیں چلانا۔
درخواست گزار کے وکیل نے موقف دیا کہ گزشتہ روز بھی کورونا میں مبتلا ایک پولیس اہلکارعلاج نہ ہونے کی وجہ سے جاں بحق ہوگیا، تمام اسپتال دیگر امراض میں مبتلا مریضوں کو پہلے کورونا کا ٹیسٹ کروانے کا کہتے ہیں، کورونا کی رپورٹ میں تاخیر کی وجہ سے ہارٹ اٹیک کے مریض مررہے ہیں۔
عدالت نے تمام سرکاری اور پرائیوٹ اسپتالوں کو فوری طور پر ایمرجنسی وارڈ اور اوپی ڈی کھولنے کا حکم دیا جبکہ دیگر امراض میں مبتلا مریضوں کا علاج نہ کرنے والے اسپتال انتظامیہ کیخلاف کارروائی کرنے کی ہدایت کی۔

یہ بھی پڑھیں

لی مارکیٹ میں عوام کیلئے سہولیات سے لیس نئے بیت الخلا قائم

لی مارکیٹ میں عوام کیلئے سہولیات سے لیس نئے بیت الخلا قائم

کراچی: بیت الخلا دو خواتین کے لیے اور دو مردوں کے لیے پاکستان کے پہلے …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے