گلگت بلتستان پاکستان کا پانچواں صوبہ، سی پیک کی وجہ سے کشمیر پالیسی تبدیل نہیں ہوگی، چین نے بھارتی اعتراض مسترد کردیا

بیجنگ: چین نے کہا ہے کہ پاکستان اور بھارت کو مذاکرات کے ذریعے کشمیر کے تنازع کا حل نکالنا چاہیے۔یہ بات چینی وزارت خارجہ کی ترجمان ہوا چون اینگ نے بیجنگ میں ہفتہ وار پریس بریفنگ کے دوران کہی۔ پاکستان کی جانب سے گلگت بلتستان کو کشمیر کا حصہ قرار دینے کے منصوبے پر بھارتی اعتراض سے متعلق ایک سوال کے جواب میں ان کا کہنا تھا کہ یہ پاکستان کا پانچواں صوبہ ہے اور پاک چین اقتصادی راہداری منصوبہ ان ہی علاقوں کے ذریعے دونوں ممالک کو منسلک کرے گا۔ ترجمان کا کہنا تھا کہ کشمیر سے متعلق چین کی پالیسی بااصول اور صاف ہے۔انہوں نے مزید کہا کہ یہ پاکستان اور بھارت کے درمیان ایک تاریخی مسئلہ ہے، جسے مناسب طریقے سے مذاکرات کے ذریعے حل کرنے کی ضرورت ہے۔چینی وزارت خارجہ کی ترجمان ہوا چون اینگ نے واضح طور پر کہا کہ سی پیک منصوبے سے چین کی کشمیر سے متعلق پالیسی تبدیل نہیں ہوگی۔

یہ بھی پڑھیں

ہلسنکی میں یورپی ملکوں کے وزرائے خزانہ کا اجلاس

ہلسنکی میں یورپی ملکوں کے وزرائے خزانہ کا اجلاس

یورپی یونین کے وزرائےخزانہ نے یونین کے مالی قوانین کو آسان بنانے کی راہوں کاجائزہ …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے