پارٹی میں مجھ سمیت 7 ماڈلز تھیں جو شراب پی کر ۔۔۔ آسٹریلوی ماڈل نے ایسا واقعہ سنا دیا کہ سب دنگ رہ گئے

میلبورن: معروف گلوکار جسٹس بیبر کی جانب سے پارٹی میں شرکت کیلئے منتخب ہونے والی آسٹریلوی ماڈل میلبورن کے سمندر میں کشتی پر ہونے والی پارٹی میں ”مستی“ کرنے کے الزام پر میدان میں آ گئی ہیں اور اندر کی باتیں بتا کر سب کو حیران کر دیا ہے۔ غیر ملکی خبر رساں ادارے ”ہیرالڈ سن“ کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے آسٹریلین سیلفی ماہر نیسا نے وہ سب کچھ بتا دیا جو درحقیقت پارٹی کے دوران ہوا تھا۔ نیسا نے تفصیلات نہ بتانے کا معاہدہ کرنے کے باوجود بھی یہ بتا کر سب کو حیران کر دیا ہے کہ پارٹی میں ایسا کچھ ہوا ہی نہیں جس کے بارے میں بات کی جائے۔

یہ سچ ہے! جسٹس بیبر نے ذاتی طور پر 7 ماڈلز کو منتخب کیا اور انہیں کشتی پر ہونے والی ایک پارٹی میں بلایا جو ایک دوسرے ساتھ بیٹھیں اور صرف شراب پی۔ پارٹی میں جا کر جسٹس بیبر کے ساتھ ”مستی“ کرنے کے دعوے سامنے آنے کے بعد آسٹریلوی ماڈل نیسا میدان میں آئی اور کہا کہ ”نہیں، خدا کیلئے بالکل بھی نہیں! وہ بالکل شائستہ تھا اور عزت دے رہا تھا۔ وہاں صرف بیبر، اس کا عملہ اور بہترین دوست موجود تھے، جو شراب پینے والی گیم کھیل رہے تھے۔وہاں صرف 7 لڑکیاں تھیں اور ہم نے وہاں ایک گول دائرے میں بیٹھ کر کچھ شراب پی اور گپ شپ لگائی، ہم نے بیبر کے کنسرٹ کے بارے میں بھی بات دی، اور سب یہی کچھ کر رہے تھے۔ آسٹریلوی سوشلسٹ خاتون نے مزید کہا کہ جسٹس بیبر بہت ”پیارا“ ہے اور زبردست گفتگو کرتا ہے اور آپ اس کے ساتھ بہترین وقت گزار سکتے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں

ہلسنکی میں یورپی ملکوں کے وزرائے خزانہ کا اجلاس

ہلسنکی میں یورپی ملکوں کے وزرائے خزانہ کا اجلاس

یورپی یونین کے وزرائےخزانہ نے یونین کے مالی قوانین کو آسان بنانے کی راہوں کاجائزہ …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے