’رائس اے ٹی ایم‘ کا کامیابی کے ساتھ استعمال جاری ہے

’رائس اے ٹی ایم‘ کا کامیابی کے ساتھ استعمال جاری ہے

ہنوئی: ویتنام میں ایک نجی کمپنی نے بینکوں میں رقم نکالنے کے لیے نصب آٹو میٹڈ ٹالر مشین (ATM) کی طرح ’رائس اے ٹی ایم ‘ ایجاد کی ہے جس سے شہری کسی بھی وقت چاول نکال سکتے ہیں

ملک کے تمام ہی بڑے شہروں میں نصب کی گئی ہے اور اس مشین سے ضرورت مند ایک وقت میں ڈیڑھ کلو چاول حاصل کر سکتے ہیں۔ اس مشین سے دیہاڑی دار مزدور اور بیروزگار مستفید ہوسکتے ہیں۔
رائس اے ٹی ایم کا آئیڈیا ملک کے معروف بزنس مین نے دیا اور وہی ان مشینوں کے لیے چاول فراہم کر رہے ہیں اس سے قبل اسپتالوں کو مختلف طبی آلات فراہم کرچکے ہیں اور ایک ٹیکنالوجی کمپنی کے سربراہ بھی ہیں۔
ویتنام میں کورونا وائرس سے متاثر ہونے والوں کی تعداد 262 ہوگئی ہے تاہم ہلاکتیں صفر ہیں۔ حکومت نے ملک بھر میں 15 روز کے لیے لاک ڈاؤن نافذ کیا ہے جس کی وجہ سے بے روزگاری میں اضافہ ہوا ہے اور دیہاڑی دار طبقہ کو کھانے کے لالے پڑگئے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں

طلوع آفتاب سے قبل تین منزلہ رہائشی عمارت گرنے سے کم از کم 10 افراد ہلاک

طلوع آفتاب سے قبل تین منزلہ رہائشی عمارت گرنے سے کم از کم 10 افراد ہلاک

بھارت: بھونڈی کی نگرانی کرنے والے تھانہ سٹی اتھارٹی کے ایک عہدیدار نے اے ایف …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے