وفاقی اور صوبائی حکومتیں ڈاکٹرز کی ضروریات پوری کریں

وفاقی اور صوبائی حکومتیں ڈاکٹرز کی ضروریات پوری کریں

اسلام آباد: سپریم کورٹ آف پاکستان نے گزشتہ روز ہونے والی کورونا وائرس سے نمٹنے کے لیے ناکافی انتظامات کے سلسلے میں از خود نوٹس کی سماعت کا تحریری حکم نامہ جاری کر دیا

اٹارنی جنرل نے بتایا کہ کرونا سے نمٹنے کیلئے تمام وسائل بروئے کار لائے جا رہے ہیں، کورونا سے متعلق قانون سازی کے لئے حکومت سے مشاورت کی یقین دہانی کرائی گئی، تمام صوبوں نے بھی کورونا سے تحفظ کے لئے اقدامات کی یقین دہانی کرائی، پاکستان میڈیکل ایسوی سی ایشن کے سربراہ نے 40000 ڈاکٹرز کی رجسٹریشن جلد مکمل کرنے کی یقین دہانی کرائی،کورونا سے متعلق حکومتی اعلی سطح اجلاس کی تفصیلات عدالت میں پیش کی جائیں، کیس کی مزید سماعت 20 اپریل کو ہوگی۔
سپریم کورٹ نے اپنے تحریری حکم نامے میں کہا ہے کہ عدالت کو پی پی ای اور کٹس کی ملک میں تیاری سے متعلق بتایا گیا،ملک بھر کے ڈاکٹرز اور پیرا میڈیکل اسٹاف کورونا کے خلاف ہر اول دستہ ہیں، وفاقی اور صوبائی حکومتیں ڈاکٹرز کی ضروریات پوری کریں۔ انہیں پی پی ای سمیت تمام ضروری طبی سامان مہیا کیا جائے۔
عدالت عظمیٰ نے اپنے حکم نامے میں سندھ حکومت کی کارکردگی کو افسوسناک قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ سندھ میں حالات بہت خراب ہیں، کراچی میں 11 یونین کونسلز کو سیل کر دیا گیا، سندھ حکومت کو سیل شدہ یونین کونسلز میں متاثرہ افراد کی تعداد کا بھی علم نہیں، سیل ہونے والی یونین کونسلز میں کھانا اور طبی امداد فراہم کرنے کا کوئی بھی منصوبہ نہیں ہے۔ عوام انتظامیہ سے تنگ آکر سراپا احتجاج ہے، عوام کو ضروری اشیا خریدنے کی کوئی سہولت نہیں دی جارہی، سندھ حکومت کی جانب سے 8 ارب روپے راشن تقسیم کرنے کی کوئی تفصیل پیش نہیں کی گئی، سندھ حکومت آئندہ سماعت پر تفصیلی رپورٹ جمع کرائے۔
سپریم کورٹ نے اپنے حکم نامے میں کہا ہے کہ بین الصوبائی سفری پابندی لگانا آرٹیکل 15 کے تحت وفاق کا اختیار ہے، پنجاب حکومت کی جانب سے بین الصوبائی سفری پابندی کا نوٹی فکشن کالعدم قرار دیا جاتا ہے۔

یہ بھی پڑھیں

نواز شریف کے اے پی سی سے خطاب کو روکنے لیے قانونی طریقہ کار پر غور

نواز شریف کے اے پی سی سے خطاب کو روکنے لیے قانونی طریقہ کار پر غور

اسلام آباد: اب اس معاملے پر وفاقی حکومت بھی میدان میں آ گئی ہے اور …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے