مقدس مہینے کے دوران کسی قسم کی پابندی کو برداشت نہیں کریں گے

مقدس مہینے کے دوران کسی قسم کی پابندی کو برداشت نہیں کریں گے

اسلام آباد: راولپنڈی  اور اسلام آباد کے 50 سے زائد جید علمائے کرام نے جامعہ دارالعلوم زکریا، ترنول میں ایک اجلاس منعقد کیا جس میں انہوں نے حکومت کو متنبہ کیا کہ اجتماعات کو محدود رکھنے کی سوچ کو آگے نہ بڑھایا جائے

فیصلے کا اعلان کرتے ہوئے صدر جامعہ دارالعلوم زکریا اور جمعیت علما اسلام (ف) اسلام آباد کے سرپرست پیر عزیز الرحمٰن ہزاروی کا کہنا تھا کہ جید علمائے کرام نے واضح کیا ہے کہ حکومت اور ریاستی اداروں کے ساتھ تصادم سے بچنے کے لیے تمام کوششیں کی جائیں گی‘۔
موجودہ صورتحال میں نماز کے لیے مزید وقت کا مطالبہ کیا گیا اور اعلان کیا گیا کہ پانچ نمازوں کے علاوہ جمعہ اور تراویح اجتماعات لازمی احتیاطی تدابیر کے ساتھ جاری رکھیں گے۔
احتیاطی تدابیر میں سینیٹائزر کا استعمال، قالینوں کو ہٹانا، فرش کی صفائی کرنا، صابن سے ہاتھ دھونے اور معاشرتی فاصلے کو برقرار رکھنا شامل ہیں۔
اجلاس کی ایک ویڈیو کلپ میں علمائے کرام، کندھے سے کندھا ملا کر بیٹھے تھے، اجلاس میں جے یو آئی-ف، عالمی تنظیم ختم نبوت، راجہ بازار کی تعلیم القرآن جیسے مدرسوں اور اہل سنت والجماعت سمیت متعدد سیاسی و غیر سیاسی تنظیموں سے تعلق رکھنے والے افراد بھی موجود تھے۔
پیر عزیز الرحمن ہزاروی نے کہاکہ ’مساجد کی بندش اور جمعہ اور تراویح کی نمازوں پر پابندی عائد کرنا ناقابل قبول ہے‘۔
انہوں نے مزید کہا کہ مسئلے کا حل اللہ تعالی سے معافی مانگنے اور مساجد میں عوام کی تعداد بڑھانے میں ہی ہے۔
اجلاس میں متعدد علماء کی گرفتاری پر حکام کو تنقید کا نشانہ بنایا گیا اور ان کے خلاف تمام مقدمات منسوخ کرنے کا مطالبہ کیا گیا۔

یہ بھی پڑھیں

نیپرا بجلی کے نرخوں میں ایک روپے 62 پیسے اضافے کی منظوری

نیپرا بجلی کے نرخوں میں ایک روپے 62 پیسے اضافے کی منظوری

اسلام آباد: نیپرا کے ایک ترجمان نے کہا کہ ریگولیٹر کے نئے نرخ وفاقی حکومت …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے