عالمی منڈی میں تیل کی قیمتوں میں کمی

عالمی منڈی میں تیل کی قیمتوں میں کمی

سعودی عرب : کاروباری روز کے ابتدا میں برینٹ کروڈ 66 سینٹ یا 1.9 فیصد کمی کے بعد آج صبح 33.45 ڈالر کا ہوگیا جو اس سے قبل 30 ڈالر کی سطح چھو چکا ہے

ویسٹ ٹیکساس انٹرمیڈیٹ خام تیل 98 سینٹ یا 3.5 فیصد کی کمی کے بعد 27.36 ڈالر فی بیرل پر آگیا جو اس سے قبل 25.28 ڈالر کی سطح کو بھی چھو چکا ہے۔
گزشتہ ہفتے کے آخر میں قیمتوں میں اضافہ ہوا تھا، جس کی وجہ پیٹرولیم ایکسپورٹ کرنے والے ممالک کی تنظیم (اوپیک) اور اس کے اتحادی دنیا بھر میں خام سپلائی میں کم از کم 10 بیرل فی یوم تک کمی لانے کے معاہدے کی امید تھی۔
سعودی عرب اور روس کی ابتدائی طور پر پیر کو پیداوار میں کٹوتیوں پر تبادلہ خیال کرنے کے لیے ملاقات ہونی تھی تاہم مارچ میں ہونے والے مذاکرات کے خاتمے کے بعد ایک دوسرے پر الزامات لگانے کے بعد اب یہ ملاقات 9 اپریل کو ہونی متوقع ہے۔
سڈنی میں سی ایم سی گلوبل مارکیٹس کے چیف اسٹریٹیجک مائیکل میک کارتھی نے کہا کہ ’روس اور سعودی عرب کے درمیان ہونے والی ملاقات میں تاخیر سے ہی ہوا کا رخ بدل گیا‘۔
امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے کہا تھا کہ اگر وہ امریکہ کے توانائی کے شعبے کے ورکرز کو تیل کی قیمت میں آنے والی کمی سے ’بچانے‘ کی ضرورت ہو تو وہ خام درآمد پر محصولات عائد کردیں گے جو روس اور سعودی عرب کے مابین مارکیٹ میں حصے کو لے کر لڑائی کی وجہ سے کم ہوچکے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں

’اسنیپ چیٹ‘ نے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی ایپلیکیشن پر تشہیر روک دی

’اسنیپ چیٹ‘ نے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی ایپلیکیشن پر تشہیر روک دی

واشنگٹن: ٹرمپ نے حالیہ دنوں سوشل میڈیا پر سیاہ فاموں کی جانب سے احتجاج اور …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے