بھارتی فلم انڈسٹری اپنے محسن کو بھول گئی، شرم کی بات ہے

بالی ووڈ انڈسٹری میں یک بعد دیگرے فلموں مین بہترین اداکاری کے جوہر دکھا کر فلم نگری میں اپنی جگہ بنانے والے اداکار نواز الدین صدیقی نے ایوارڈ شو میں آنجہانی اوم پوری کا تذکرہ نہ ہونے پر مایوسی کا اظہار کیا۔

سماجی رابطےکی ویب سائٹ ٹوئٹر پر ایک ٹوئٹ کے ذریعے نوازالدین نے اپنے غم و غصے اور مایوسی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ اوم پوری کی خدمات کا اعتراف صرف اکیڈمی ایوارڈز (آسکر) نے کیا مگر بالی ووڈ کے کسی بھی ایوارڈز کی تقریب کے منتظمین نے اوم پوری کا نام لینا تک گوارا نہیں کیا۔

انہوں نے غصے کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ’’بہت شرم کی بات ہے بالی ووڈ انڈسٹری اپنے  آنجہانی اوم پوری کی خدمات کو بھول چکی ہے‘‘

یاد رہے بھارتی لیجنڈ اوم پوری رواں برس 6 جنوری کو 66 سال کی عمر میں طبیعت کی خرابی کے باعث انتقال کرگئے تھے مگر اُن کی پوسٹ مارٹم رپورٹس نے نئے سوالات کو جنم دیا تھا جن میں اُن کے جسموں پر تشدد کے نشانات بھی واضح تھے۔

اوم پوری نے پاک بھارت تعلقات اور فنکاروں کے لیے بہت سے اقدامات کیے اور خود بہ پاکستانی فلموں میں اپنی اداکاری کے جوہر دکھائے، اوم پوری کی زندگی کی آخری فلم ایکٹر ان لاء (پاکستانی) ہی تھی۔

یہ بھی پڑھیں

پاکستان آکر ہمیشہ اچھا لگتا ہے، بھارتی اداکار شتروگن سنہا

پاکستان آکر ہمیشہ اچھا لگتا ہے، بھارتی اداکار شتروگن سنہا

لاہور:  بالی ووڈ اداکار شتروگن سنہا کا کہنا ہے کہ پاکستان آکر ہمیشہ اچھا لگتا …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے