نئے کورونا وائرس کے کیسز بڑھنے پر حفاظتی گیئرز کی قلت

نئے کورونا وائرس کے کیسز بڑھنے پر حفاظتی گیئرز کی قلت

کراچی: اب تک 4 ڈاکٹروں کا وائرس سے متاثر ہونے کی علامات سامنے آنے پر ٹیسٹ کیا جاچکے ہے جن میں سے ایک خیبر پختونخوا میں دو روز قبل ہلاک ہونے والے مریض سے ٹیسٹ کے نمونے لینے والے ڈاکٹر بھی شامل ہیں

نجی ہسپتالوں میں میڈیکل اسٹاف، ڈاکٹرز، نرسز اور یہاں تک لیب تکنیکی ماہرین کا کہنا ہے کہ انہیں اپنی حفاظت کا خوف ہے اور وہ جہاں کورونا وائرس کے مریض داخل ہیں اس وارڈز میں کام نہیں کرنا چاہتے۔
ذاتی حفاظتی آلات (پی پی ای) پر مشتمل کٹ میں خصوصی کپڑے اور آلات ہوتے ہیں جن میں ایک مرتبہ استعمال ہونے والے ماسکس، گاؤنز، ہوڈز، دستانے، جوتے کے کوورز، فیسس شیلڈ اور آنکھوں کے حفاظتی گوگلز شامل ہیں جسے اس وبائی مرض سے نمٹنے والے صحت حکام کو پہننا لازمی ہوتا ہے۔
ینگ ڈاکٹرز اور میڈیکل اسٹاف جو پی پی ای کٹس کا مطالبہ کر رہے ہیں انہیں انفیکشن کنٹرول اور روک تھام کے بارے میں بتانا ہوگا، پی پی ای کٹس عام ڈیوٹیز کے لیے نہیں ہوتی، اگر ان سب کو خصوصی آلات فراہم کردیے جائیں گا تو کورونا وائرس سمیت ٹی بی، سوائن فلو اور کونگو بخار کو دیکھنے والے ڈاکٹروں کے لیے سپلائی پر اثر پڑے گا۔
کراچی کے ایک عوامی ہسپتال میں تعینات سینیئر ڈاکٹر کا کہنا تھا کہ ’ہمیں پی پی ای کٹس اور سینیٹائزرز کی کمی کا سامنا ہے، کورونا وائرس سے نمٹنے والے میڈیکل اسٹاف کی جانب سے فیس شیلڈ اور گوگلز کا تو دوبارہ استعمال کیا جارہا ہے‘۔
کورونا وائرس سے نمٹنے والے انڈس ہسپتال اور ڈاو اوجھا کیمپس میں ڈاکٹروں نے اسی طرح کے خسشات کا اظہار کیا اور کہا کہ انہیں ماسکس اور پی پی ای کٹس کی ضرورت ہے۔
کراچی کے سول ہسپتال میں قلت ابھی محسوس نہیں ہوئی تاہم اسٹاف کو تشویش ہے کہ کٹس کی فراہمی جاری رہے گی یا نہیں۔
ڈاویونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز، سول ہسپتال کے اسسٹنٹ پروفیسرڈاکٹر عزیز اللہ خان دھلو کا کہنا تھا کہ ’اب تک سرجیکل اور این 95 ماسکس اور پی پی ای کٹس سول ہسپتال میں دستیاب ہیں تاہم مارکیٹ اور کئی نجی ہسپتالوں میں اس کی کمی ہے اور وہ اسے حاصل کرنے کی کوششیں کر رہے ہیں‘۔
ان کا کہنا تھا کہ ’اس وقت صرف حکومت اس کی دستیابی کو یقینی بنا سکتی ہے کیونکہ کورونا وائرس بہت تیزی سے پھیل رہا ہے‘۔
ڈاکٹروں اور ہسپتال انتظامیہ کے احتجاج کا سامنا کرنے والی صوبائی حکومتیں مزید کٹس حاصل کرنے کی کوششیں کر رہی ہیں۔

یہ بھی پڑھیں

کرونا وائرس کے باعث اموات 11 ہزار 402 ہوگئیں

کرونا وائرس کے باعث اموات 11 ہزار 402 ہوگئیں

کراچی : دنیا بھر میں کورونا وائرس سے اموات کا سلسلہ رکنے کا نام نہیں …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے