پی آئی اے رواں سال مئی سے امریکا کے لیے براہ راست پروازیں شروع کرے گی

پی آئی اے رواں سال مئی سے امریکا کے لیے براہ راست پروازیں شروع کرے گی

راولپنڈی: پاکستان انٹرنیشنل ایئر لائن (پی آئی اے) کو واشگنٹن کے لیے براہ راست پروازیں شروع کرنے کی کلیئرنس امریکی کلیئرنس درکار ہے

پاکستان انٹرنیشنل ایئر لائن (پی آئی اے) کو واشگنٹن کے لیے براہ راست پروازیں شروع کرنے کی کلیئرنس امریکی کلیئرنس درکار ہے
امریکی ٹیم ایوی ایشن کے سیکریٹری ناصر حسین جیمی سے ملاقات میں ایوی ایشن اور سیکیورٹی سے متعلق امور پر تبادلہ خیال کرے گی۔
ممکنہ طور پر پی آئی اے رواں سال مئی سے امریکا کے لیے براہ راست پروازیں شروع کرے گی۔
امریکی ٹیم تینوں ہوائی اڈوں کے سیکیورٹی آڈٹ کے بعد اپنی حتمی رپورٹ پیش کرے گی۔
امریکی انتظامیہ اور پی آئی اے کے مابین گزشتہ دو برس سے بات چیت جاری تھی۔
پی آئی اے نے تین بڑے ہوائی اڈوں پر اسکریننگ مشینوں کے استعمال سمیت امریکی حکام سے طلب کردہ تمام اقدامات اٹھائے ہیں۔
امریکی ٹرانسپورٹ اتھارٹی کے وفد نے اس سے قبل حتمی سیکیورٹی آڈٹ ٹیم کی آمد سے قبل پاکستان کا دورہ کیا تھا۔
پی آئی اے نے ایک فلائٹ پلان تیار کیا جس کے مطابق ابتدائی طور پر ہفتے میں 3 پروازیں نیویارک کے لیے چلائی جائیں گی لیکن بعد میں اس تعداد میں اضافہ کیا جائے گا۔
سیکیورٹی خدشات کے پیش نظر امریکا نے کسی ایسی براہ راست پرواز کی اجازت نہیں دی تھی جو پاکستانی ہوائی اڈے سے اس کی فضائی حدود میں جانے والی ہو۔
یہ پہلا موقع ہوگا جب پی آئی اے پاکستان سے امریکا کے لیے اپنی براہ راست پروازیں شروع کرے گی۔

یہ بھی پڑھیں

31 مئی کو لاک ڈاؤن میں نرمی یا سختی کا فیصلہ کیا جائے گا

اسلام آباد : وزیراعظم عمران خان نے قومی رابطہ کمیٹی کا اجلاس 31 مئی کو …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے