آذربائیجان کے صدر نے اپنی بیوی کو نائب صدر تعینات کر دیا

آذربائیجان کے صدر نے اپنی بیوی کو نائب صدر تعینات کر دیا ہے جبکہ بعض اپوزیشن رہنماؤں نے فیصلے کے خلاف عدالت سے رجوع کرنے کا اعلان کیا ہے۔

آذربائیجان کے صدر اور سویت یونین کے سابق رہنما ایحام علییف نے اپنی 52 سالہ بیوی مہربان علیویہ کو ملک کا نائب صدر منتخب کرلیا ہے۔ البتہ یہ کہا جا رہا ہے کہ وہ کابینہ کے معاملات دیکھیں گی۔

ایحام علییف کو اس تعیناتی پر شدید تنقید کا سامنا ہے،بعض اپوزیشن رہنماؤں نے فیصلے کے خلاف عدالت سے رجوع کرنے کا اعلان کیا ہے۔ یہ نامزدگی ستمبر میں کیے گئے ریفرنڈم کے ذریعے کی گئی ہے۔

اپوزیشن جماعتوں کا کہنا ہے کہ علیویہ کو نائب صدر بنایا جانا غیر جمہوری فیصلہ ہے اور یہ اقتدار پر علی اف خاندان کی گرفت مضبوط کرنے کی کوشش ہے۔

اپوزیشن لیڈر گینبر کا کہنا ہے کہ 21 ویں صدی میں نسل پرستی کی کوئی گنجائش نہیں ہے۔

غیرملکی میڈیا کے مطابق آذربائیجان کے صدر نے سیکیورٹی کونسل میں خطاب کرتے ہوئے کہا کہ علیویہ اعتماد پر پورا اترے گی۔

مہربان علیویہ2005 سے آذربائیجان کی حکمران پارٹی کا حصہ ہیں اور ان کی شناخت معروف ممبر مقننہ کے طور پر کی جاتی ہے اور ساتھ ساتھ حیدر علییف فاؤنڈیشن کی سربراہ بھی ہے۔

واضح رہے کہ یہ دنیا میں کسی بھی ملک کی سیاسی تاریخ کا پہلا واقعہ ہے، جب منتخب صدر نے خاتون اول کو نائب صدر نامزد کیا ہو۔

یہ بھی پڑھیں

عالمی منڈی میں تیل کی قیمتوں میں مزید اضافہ

عالمی منڈی میں تیل کی قیمتوں میں مزید اضافہ

سعودی عرب: دنیا کے سب سے بڑے تیل کے برآمدکار سعودی عرب کی عالمی مارکیٹ …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے